Friday , January 19 2018
Home / دنیا / اوباما کا دورۂ ہند‘ باہمی تعلقات کے امکانات کی تلاش

اوباما کا دورۂ ہند‘ باہمی تعلقات کے امکانات کی تلاش

واشنگٹن۔ 18؍جنوری (سیاست ڈاٹ کام)۔ صدر امریکہ بارک اوباما کے غیر معمولی دوسرے دورۂ ہند سے دُنیا کی سب سے بڑی دو جمہوریتوں کے درمیان دفاعی تعلقات کے ’’حقیقی امکانات سے استفادہ‘‘ کی عکاسی ہوتی ہے۔ علاوہ ازیں اس سے ثابت ہوتا ہے کہ دونوں ممالک باہمی تعلقات کو کتنی اہمیت دیتے ہیں۔ دونوں ممالک کے قائدین گزشتہ 20 سال سے ہند۔ امریکہ دفاع

واشنگٹن۔ 18؍جنوری (سیاست ڈاٹ کام)۔ صدر امریکہ بارک اوباما کے غیر معمولی دوسرے دورۂ ہند سے دُنیا کی سب سے بڑی دو جمہوریتوں کے درمیان دفاعی تعلقات کے ’’حقیقی امکانات سے استفادہ‘‘ کی عکاسی ہوتی ہے۔ علاوہ ازیں اس سے ثابت ہوتا ہے کہ دونوں ممالک باہمی تعلقات کو کتنی اہمیت دیتے ہیں۔ دونوں ممالک کے قائدین گزشتہ 20 سال سے ہند۔ امریکہ دفاعی اور معاشی تعلقات کے حقیقی امکانات تلاش کرنے میں مصروف ہیں اور اب یہ کشش ثمرآور دکھائی دے رہی ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی قطعی اکثریت کے ساتھ وزیراعظم منتخب ہوئے ہیں۔ نائب وزیر خارجہ امریکہ برائے جنوبی و وسطی ایشیاء نشا دیسائی بسوال نے کہا کہ ہم باہمی تعلقات کے معیار کی حقیقی توسیع دفاعی اہمیت کے حامل باہمی تعلقات کی شکل میں دیکھ رہے ہیں۔ دونوں ممالک کے باہمی تعلقات اور ان کی رفتار انتہائی شدید ہے اور انتہائی سینئر عہدیداروں کی سطح پر ہے جس کا ازیں کبھی بھی مشاہدہ نہیں کیا گیا۔ اوباما کے درۂ ہند سے پہلے انٹرویو دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ کسی برسر عہدہ صدر امریکہ کا پہلی بار دوسرا دورۂ ہند ہے۔ اوباما انتظامیہ کے اعلیٰ سطحی سفارت کار نے کہا کہ حال ہی میں وزیر خارجہ جان کیری ہندوستان کا دورہ کرچکے ہیں۔ 30 ستمبر 2014ء کو وزیراعظم نریندر مودی اور صدر بارک اوباما کی وہائیٹ ہاؤس میں ملاقات ہوئی تھی اور اب صدر امریکہ بارک اوباما ہندوستان کے جشن یوم جمہوریہ میں بحیثیت مہمانِ خصوصی شرکت کرنے والے ہیں۔ گزشتہ تین ماہ کے دوران کم از کم 36 اعلیٰ سطحی اجلاس ہندوستان اور امریکہ کے درمیان منعقد کئے جاچکے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT