Monday , December 11 2017
Home / عرب دنیا / اوباما کو دوبئی میں ملازمت کی پیشکش

اوباما کو دوبئی میں ملازمت کی پیشکش

دوبئی 17 مئی (سیاست ڈاٹ کام) امارات کے ایک قانون داں نے صدر امریکہ بارک اوباما کو دوبئی کی ایک کمپنی میں ملازمت کا پیشکش کیا ہے تاکہ وہ اسلام کو بہتر طور پر سمجھ سکیں۔ جبکہ مغربی ذرائع ابلاغ میں مستقل طور پر مسلمانوں اور اُن کے مذہب کو دہشت گردی کے مترادف ظاہر کیا جاتا ہے۔ ایک اخباری اطلاع کے بموجب عیسیٰ بن حیدر نے اوباما کو اپنی کمپنی کو ملازمت کا پیشکش کیا ہے تاکہ وہ صدر امریکہ کے عہدہ سے سبکدوش ہونے کے بعد دوبئی میں سکونت اختیار کرسکیں اور اسلام کی رواداری کا قریب سے مطالعہ کرسکیں۔ یہ پیشکش ٹوئٹر پر اتوار کے دن کی گئی۔ اِس کے بعد ٹوئٹر پر اِس کا اعادہ کیا گیا۔ قانون داں نے تحریر کیا ہے کہ صدر اوباما، میں آپ کو میرے دفتر میں ملازمت کا پیشکش کرتا ہوں۔ اِس ملازمت میں تنخواہ، قیام کا انتظام، ٹکٹوں کا انتظام اور عرب ممالک کے سفر شامل ہوں گے۔ اِس پس منظر میں اُنھوں نے عربی میں بھی ٹوئٹر پیغام کو دہرایا اور کہاکہ ممکن ہے کہ اُن کی پیشکش عجیب معلوم ہوتی ہو لیکن (اوباما) کو مسلمانوں کے ساتھ مل جل کر رہنا چاہئے تاکہ اسلام کے سیاسی اُصولوں سے واقفیت حاصل کرسکیں کیوں کہ امریکہ میں مسلمانوں کے خلاف مہم چلائی جارہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT