Wednesday , September 19 2018
Home / دنیا / اوباما کو یوم جمہوریہ تقریب کیلئے مدعو کرنے کی تجویز نریندر مودی کی تھی

اوباما کو یوم جمہوریہ تقریب کیلئے مدعو کرنے کی تجویز نریندر مودی کی تھی

واشنگٹن ۔ 21 جنوری ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم نریندر مودی کے گُن گانے والوں میں ہندوستانی سفیر متعینہ امریکہ ایس جے شنکر بھی شامل ہوگئے ہیں جن کا یہ کہنا ہے کہ نریندر مودی کی طرز فکر اُن کے تمام ہمعصر قائدین سے مختلف ہے۔ ہندوستان کی روایت رہی ہے کہ یوم جمہوریہ کے موقع پر کسی بھی بیرونی سربراہ مملکت کو مہمان خصوصی کے طورپر مدعو کیا جا

واشنگٹن ۔ 21 جنوری ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم نریندر مودی کے گُن گانے والوں میں ہندوستانی سفیر متعینہ امریکہ ایس جے شنکر بھی شامل ہوگئے ہیں جن کا یہ کہنا ہے کہ نریندر مودی کی طرز فکر اُن کے تمام ہمعصر قائدین سے مختلف ہے۔ ہندوستان کی روایت رہی ہے کہ یوم جمہوریہ کے موقع پر کسی بھی بیرونی سربراہ مملکت کو مہمان خصوصی کے طورپر مدعو کیا جاتا ہے تاہم اس بار امریکی صدر اوباما کو مدعو کرنے کی تجویز بھی مودی نے ہی پیش کی تھی اور بعد ازاں مسٹر جے شنکر کو اس بارے میں مطلع کیا گیا تھا تاکہ وہ امریکہ میں رہتے ہوئے یہ معلوم کرسکیں کہ آیا اس تجویز پر عمل آوری ہوسکتی ہے یا نہیں ۔ انھوں نے اپنے فرائض بخوبی انجام دیتے ہوئے کئی سینئر انتظامی افسران سے کئی بار ملاقاتیں کیں اور انھیں ہندوستان میں منائے جانے والے یوم جمہوریہ اور خصوصی طورپر اُس کی پریڈ کی اہمیت کی تفصیلات بتائیں۔ انھوں نے کہا کہ یہ حالانکہ ایک سیاسی نوعیت کی حامل دعوت ہے جو یوم جمہوریہ کے موقع پر کسی کو مدعو کئے جانے سے رقم ہے ۔

اسطرح امریکہ کو بھی یوم جمہوریہ کی اہمیت کا قائل کردیا گیا حالانکہ دعوت نامہ قبول کرنے میں پس و پیش جاری رہی لیکن بالآخر صدر اوباما کی جانب سے ’’ہاں‘‘ کہہ دی گئی۔ اُس کے بعد جو ہوا اُسے ہم ٹوئیٹر ڈپلومیسی سے تعبیر کرسکتے ہیں کیونکہ سب سے پہلے وزیراعظم نریندر مودی نے اپنے ٹوئیٹر پر اوباما کو مدعو کئے جانے کے بارے میں تحریر کیا۔ دونوں ہی ممالک کے انتہائی اعلیٰ افسران نے انتہائی رازداری سے کام لیا کیونکہ اوباما کی شرکت کے بارے میں صرف چنندہ لوگوں کو ہی معلوم تھا ۔ 30 ستمبر کو وائیٹ ہاؤس میں اوباما اور مودی کی ملاقات کے بعد ہی یوم جمہوریہ میں اول الذکر کو مدعو کرنے کی جدوجہد شروع ہوگئی تھی ۔ ذرائع نے بتایا کہ دعوت نامہ قبول کرلئے جانے کے بعد دیگر تفصیلات پر کام کا آغاز ہوگیا جس میں سب سے اہم سکیورٹی ہے ۔ اُن تمام سرگرمیوں کا سلسلہ اُس وقت تک جاری رہے گا جب تک اوباما نئی دہلی کی سرزمین پر قدم نہیں رکھ دیتے ۔ سیاسی مبصرین کا بھی کہنا ہے کہ مودی ہند۔ امریکہ تعلقات کو بیحد اہمیت دیتے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ انھوں نے اوباما کو یوم جمہوریہ تقریبات میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کرنے مدعو کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT