Thursday , December 13 2018

اوبیرٹیکسی ڈرائیور کو آر سی حوالے کرنے کا حکم

نئی دہلی 15 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام )اوبیر کیاب ڈرائیور کو جس پر خاتون فینانس ایگزیکٹیو کی عصمت ریزی کا الزام ہے، حکومت دہلی نے اس ٹیکسی کا رجسٹریشن سرٹیفکیٹ (آر سی) فوری حوالے کرنے کی ہدایت دی جس میں یہ جرم سرزد ہوا۔ ٹرانسپورٹ ڈپارٹمنٹ کے مطابق 32 سالہ ڈرائیور شیو کمار یادو کو اس ٹیکسی کے بقایاجات بھی فوری ادا کرنے کی ہدایت دی گئی۔ ڈپارٹمنٹ کے ایک سینئر عہدیدار نے بتایا کہ 5 ڈسمبر کی شب جس کار میں یہ واقعہ پیش آیا اس کے ڈرائیور کو آر سی بک فوری حوالے کرنے اور بقایا جات فی الفور ادا کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ ملزم ڈرائیور کو آبائی مقام اتر پردیش کے متھرا میں گرفتار کیا گیا تھا ۔ اس نے 5 ڈسمبر کی شب شمالی دہلی کے اندر لوک علاقہ میں واقع اپنے گھر جانے والی خاتون کی کار میں مبینہ طور پر عصمت ریزی کی تھی۔ ٹرانسپورٹ ڈپارٹمنٹ کے ذرائع نے کہا کہ ملزم چونکہ جیل میں ہے اس لئے خاندان کا کوئی بھی رکن آر سی واپس دے سکتا ہے۔ دہلی حکومت نے 8 ڈسمبر کو اوبیر کار سرویس پر امتناع عائد کردیا ہے ۔ اس کے علاوہ ملزم ڈرائیور کا ڈرائیونگ لائسنس اور کا رجسٹریشن و پرمٹ بھی منسوخ کردیا ہے۔ ڈپارٹمنٹ کے مطابق اس کار کو جاریہ سال 28 مئی کو ٹیکسی پرمٹ جاری کیا گیا تھا اور پرمٹ رکھنے والے کے کردار کی جانچ کے بعد ہی یہ منظوری دی گئی تھی۔ حکومت دہلی نے عوام کی شدید برہمی کو دیکھتے ہوئے قومی دارالحکومت میں غیر مسلمہ ویب کی بنیاد پر کار خدمات پر بھی امتناع عائد کردیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT