Wednesday , September 19 2018
Home / Top Stories / اورنگ آباد فسادات میں ایم آئی ایم اور شیوسینا کارپوریٹرس گرفتار

اورنگ آباد فسادات میں ایم آئی ایم اور شیوسینا کارپوریٹرس گرفتار

اورنگ آباد۔ 17 مئی (سیاست نیوز) اورنگ آباد میونسپل کارپوریشن کے 2 کارپوریٹرس کو اورنگ آباد میں ہوئے فسادات کے ضمن میں گرفتار کرلیا گیا۔ فیروز معین الدین خاں (ایم آئی ایم) اور راجندر جنجال (شیوسینا) کو ایس آئی ٹی نے منگل کو گرفتار کرلیا۔ ایم آئی ایم کے کارپوریٹر نے جو نواب پورہ سے تعلق رکھتے ہیں، پولیس اسٹیشن میں خودسپردگی اختیار کی۔ واضح رہے کہ نواب پورہ فساد میں سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے۔ اورنگ آباد ڈی سی پی کے بموجب فیروز معین الدین خان نے ہجوم کو اُکسایا تھا جس میں اے سی پی گووردھن کولیکر شدید زخمی ہوئے تھے۔ دونوں کو مقامی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں سے انہیں 3 دن کیلئے پولیس تحویل میں دے دیا گیا۔ جنجال کو جو شیواجی نگر سے نمائندگی کرتے ہیں، انہیں ان کے گھر سے گرفتار کیا گیا۔ اس الزام کے تحت کہ انہوں نے فساد کے دوران گاڑیوں کو نذرآتش کیا تھا۔ جنجال کی گرفتاری اُس وقت عمل میں آئی جب محمد شیخ عبدالمناف نے ایک ویڈیو بطور ثبوت پیش کیا جس میں جنجال گاڑیوں اور دُکانات کو نذرآتش کرنے والوں کے ساتھ ’’راجہ بازار‘‘ میں دیکھے گئے۔ ڈی سی پی ونائیک ڈھاکنے نے کہا کہ دونوں ملزمین کو واضح ثبوت کی بناء پر گرفتار کیا گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ دیگر ملزمین کو جو ان کے اس جرم میں شریک تھے، بعد تحقیقات ثبوت ملنے پر گرفتار کیا جائے گا۔ دونوں کارپوریٹرس کو آئی پی سی کی متعلقہ دفعات کے تحت الزامات وضع کئے گئے ہیں۔ فرسٹ کلاس جوڈیشیل مجسٹریٹ اے یوسوپیکار نے شیوسینا کارپوریٹر کو 18 مئی تک پولیس تحویل میں دیا۔ مذکورہ بالا فساد کے ضمن میں اب تک پولیس نے 50 افراد کو گرفتار کیا ہے۔ واضح رہے کہ ان فسادات میں 2 افراد بشمول ایک 17 سالہ نوجوان لڑکا ہلاک ہوگئے تھے اور 60 دیگر افراد بشمول کئی پولیس جوان، سیاحت کے لئے مشہور میں فساد کے دوران 11 مئی کو زخمی ہوگئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT