Friday , October 19 2018
Home / ہندوستان / اورنگ آباد اسلحہ ضبطی کیس ۔ 20 مسلم نوجوانوں کے خلاف اپیل داخل

اورنگ آباد اسلحہ ضبطی کیس ۔ 20 مسلم نوجوانوں کے خلاف اپیل داخل

ممبئی ۔ 8 جون (سیاست ڈاٹ کام) مہاراشٹر میں ہوئے ایک دہشت گردانہ واقعہ بنام اورنگ آباد اسلحہ ضبطی معاملے میں ریاستی حکومت کی جانب سے ملزمین کے خلاف داخل کی گئی اپیل کو آج ممبئی ہائی کورٹ کی دو رکنی بینچ نے سماعت کے لیئے قبول کرلیاجس سے اس مقدمہ سے باعزت بری ہوئے ملزمین سمیت دیگر ملزمین کو شدید دھکہ لگا۔موصولہ اطلاعات کے مطابق ریاستی حکومت (انسداد دہشت گرد دستہ) نے خصوصی مکوکا عدالت کے ا س فیصلہ کے خلاف اپیل داخل کی ہے جس میں عدالت نے ا س معاملے کا سامنا کررہے 20 مسلم نوجوانوں میں سے 8مسلم نوجوانوں کو باعزت بری کردیا تھا جبکہ 3نوجوانوں کو آٹھ سال ، 2نوجوانو ں کو 14سال قید بامشقت کی سزا اور دیگر 7نوجوانوں کو عمر قید کی سزا سنائی تھی۔اسی دوران ملزمین کو قانون امداد فراہم کرنے والی تنظیم جمعیتہ العلماء مہاراشٹر(ارشد مدنی)قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے ممبئی میں اخبار نویسوں کو بتایا کہ حکومت کی جانب سے داخل کی گئی اپیل کاجواب دینے کے لیئے وہ تیار ہیں اور اس تعلق سے عدالت میں نمائندگی کی گئی ہے نیز ملزمین کے دفاع میں آج سینئر وکیل آباد فونڈا، ایڈوکیٹ شریف شیخ، ایڈوکیٹ انصار تنبولی ودیگر موجود تھے جنہوں نے عدالت سے گذارش کی کہ معاملے کی جلد از جلد سماعت کی جائے کیونکہ 14 سال کی سزا پانے والے ملزمین ڈاکٹر محمدشریف اور مظفر تنویر کی ضمانت عرضداشتیں زیر سماعت ہیں۔ریاستی حکومت نے ملزمین محمد عامر شکیل احمد شیخ، سید زبیر سید انور قادری،محمد مظفر محمد تنویر،عبدالعظیم عبدالجمیل شیخ، مشتاق احمد محمد اسحاق، افضل خان نبی خان، ریاض احمد محمد رمضان،ڈاکٹر محمد شریف شبیر احمد، بلال احمد عبدالزاق، سید عاکف سید ظفر الدین، خطیب عمران عقیل احمد، شیخ وقار شیخ نثار، افروز خان شاہد خان پٹھان، محمد صمد شمشیرخان، محمد عقیل محمد اسماعیل مومن، فیصل عطاالرحمن شیخ ، محمد اسلم حاجی محمد لطیف اورسید ذبیح الدین کیخلاف اپیل داخل کی ہے۔ اور آج ہائیکورٹ نے اس تعلق سے ملزمین کو نوٹس بھی جاری کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT