Wednesday , July 18 2018
Home / شہر کی خبریں / اوقافی اراضیات کے تحفظ کیلئے چیف منسٹر کے اقدامات کا خیر مقدم

اوقافی اراضیات کے تحفظ کیلئے چیف منسٹر کے اقدامات کا خیر مقدم

ائمہ و موذنین کیلئے اعزازیہ کی رقم میں اضافہ کا بھی منصوبہ ۔ صدر نشین وقف بورڈ الحاج محمد سلیم کا بیان
حیدرآباد ۔21۔ نومبر (سیاست نیوز) صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے اوقافی اراضیات کے تحفظ کے لئے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے اقدامات کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ چیف منسٹر نے ریونیو عہدیداروں کے ذریعہ ریکارڈ کی جانچ اور انہیں ترتیب کے مطابق تیار کرنے کا تاریخی فیصلہ کیا ہے ۔ کسی بھی چیف منسٹر نے آج تک وقف بورڈ کے ریکارڈ کو بہتر بنانے کے کام پر توجہ مرکوز نہیں کی۔ صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ چیف منسٹر کی خصوصی دلچسپی سے نہ صرف وقف ریکارڈ محفوظ ہوگا بلکہ اوقافی جائیدادوں اور اراضیات کے تحفظ میں مدد ملے گی۔ وقف بورڈ کے اسٹاف کے ذریعہ اگر ریکارڈ کو بہتر بنانے کا کام انجام دیا جاتا تو اس کے لئے کافی وقت لگ سکتا تھا لیکن چیف منسٹر نے ریونیو عہدیداروں کو یہ ذمہ داری دی جس سے نہ صرف ریکارڈ محفوظ ہوگا بلکہ ریونیو ریکارڈ میں اوقافی جائیدادوں اور اراضیات درج ہوجائیں گی۔ چیف منسٹر نے ضلع کلکٹرس کو ہدایت دی کہ وہ جاریہ اراضی سروے میں اوقافی اراضیات کی نشاندہی کرتے ہوئے انہیں ریونیو ریکارڈ میں شامل کریں۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ 70 برسوں میں کسی نے اوقافی جائیدادوں کے تحفظ پر توجہ مرکوز نہیں کی۔ جاریہ سروے کی تکمیل کے بعد نہ صرف جائیدادیں اور اراضیات محفوظ ہوجائیں گی بلکہ بورڈ کی آمدنی میں اضافہ کے اقدامات کئے جائیں گے ۔ صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ چیف منسٹر نے کل منعقدہ جائزہ اجلاس میں عہدیداروں کو ہدایت دی کہ تمام غیر متنازعہ اراضیات کو فوری تحویل میں لیں تاکہ غیر مجاز قبضوں سے بچایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ائمہ و مؤذنین کے ماہانہ اعزازیہ کی رقم میں اضافہ کا منصوبہ رکھتی ہے۔ چیف منسٹر نے اسی مقصد کے تحت عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وقف بورڈ کے تحت درج رجسٹر تمام مساجد کو اس اسکیم کے دائرہ میں شامل کیا جائے اور تمام ائمہ اور مؤذنین کو اعزازیہ عطا کیا جائے۔ محمد سلیم نے کہا کہ اس اسکیم کے سلسلہ میں مساجد کی تعداد پر کوئی پابندی نہیں ہے۔ وقف بورڈ کو جتنی درخواستیں موصول ہوں گی ، ان تمام کی یکسوئی کی جائے گی ۔ حکومت نے ائمہ و مؤذنین کے اعزازیہ کیلئے بجٹ جاری کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ حج ہاؤز سے متصل زیر تعمیر کامپلکس میں اقلیتی بہبود کے دفاتر کی منتقلی کے سلسلہ میں ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی کو دورہ کرنے کا مشورہ دیا گیا ۔ وہ بہت جلد عوامی نمائندوں کے ساتھ 7 منزلہ کامپلکس کا دورہ کرتے ہوئے اس کی عاجلانہ تکمیل اور دفاتر کی منتقلی کے پروگرام کو قطعیت دیں گے۔

TOPPOPULARRECENT