Monday , July 16 2018
Home / شہر کی خبریں / اوقافی امور پر کسی بھی تبصرہ سے محمد محمود علی کا گریز

اوقافی امور پر کسی بھی تبصرہ سے محمد محمود علی کا گریز

وقف بورڈ دفتر میں داخلہ سے پس و پیش ، اسکام پر ڈپٹی چیف منسٹر کی احتیاط
حیدرآباد ۔27۔ نومبر (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی اور اعلیٰ عہدیداروں کو اوقافی امور پر کسی بھی تبصرہ سے گریز کرتے دیکھا گیا۔ وقف بورڈ میں حالیہ این او سی اسکام کے بعد ڈپٹی چیف منسٹر اور اعلیٰ عہدیدار پہلی مرتبہ حج ہاؤز پہنچے تھے۔ حج ہاؤز سے متصل کامپلکس کا معائنہ کرنے کے مقصد سے جب حج ہاؤز پہنچے تو انہوں نے عمارت کے اس حصہ میں داخلہ سے گریز کیا جہاں وقف بورڈ کے دفاتر ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر کی آمد سے قبل عہدیداروں اور عوامی نمائندوں نے گراؤنڈ فلور پر حج کمیٹی کے حصہ میں بیٹھ کر انتظار کیا اور چائے نوشی کی۔ عمارت کے معائنہ کے بعد وہ وقف بورڈ کے بجائے حج کمیٹی کے دفتر میں میڈیا سے بات چیت کرنا چاہتے تھے۔ تاہم صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم کے اصرار پر وقف بورڈ کے دفتر میں داخل ہوئے۔ اسکام کے بعد سے بورڈ میڈیا کی سرخیوں میں ہے اور روزانہ مختلف تنازعات منظر عام پر آرہے ہیں۔ پولیس تحقیقات کے دوران وقف بورڈ کے دفتر میں بیٹھنے سے گریز کی کوشش کی گئی تاکہ تنازعہ سے بچا جاسکے۔ میڈیا سے بات چیت کے دوران ڈپٹی چیف منسٹر نے وقف بورڈ اور اسکام سے متعلق کسی بھی سوال کا جواب دینے سے گریز کیا۔ حکومت کے مشیر اے کے خان نے میڈیا سے کہا کہ اسکام کی تحقیقات پولیس کر رہی ہے اور بہت جلد حقائق کا پتہ چل جائے گا۔ میڈیا نے پولیس تحقیقات میں پیشرفت اور حکومت کے موقف کے بارے میں سوالات کئے۔ وقف بورڈ سے وابستہ افراد کی خواہش تھی کہ ڈپٹی چیف منسٹر کی جانب سے وقف بورڈ کی موجودہ صورتحال پر تبصرہ کیا جائے۔ خاص طور پر بورڈ نے حکومت کے فیصلہ کی جو تائید کی ہے، اس کی ستائش ہو۔ تاہم ڈپٹی چیف منسٹر نے کسی بھی متنازعہ مسئلہ پر تبصرہ کرنے سے گریز کیا۔

TOPPOPULARRECENT