Friday , December 15 2017
Home / شہر کی خبریں / اوقافی جائیدادوں کی ترقی کیلئے سنٹرل وقف کونسل سے ممکنہ فنڈس کی فراہمی کا تیقن

اوقافی جائیدادوں کی ترقی کیلئے سنٹرل وقف کونسل سے ممکنہ فنڈس کی فراہمی کا تیقن

تلنگانہ وقف بورڈ کی کارکردگی کی ستائش ، سنٹرل وقف کی رکن اور سکریٹری کے علاوہ دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔21 جولائی (سیاست نیوز) سنٹرل وقف کونسل کے ذمہ داروں نے تلنگانہ وقف بورڈ کی کارکردگی کی ستائش کرتے ہوئے اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے سلسلہ میں سنٹرل وقف کونسل سے ممکنہ فنڈس کی فراہمی کا تیقن دیا۔ سنٹرل وقف کونسل کی رکن محترمہ منوری بیگم، سکریٹری کونسل بی ایم جمال اور پراجیکٹ آفیسر خورشید وارثی نے آج صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم اور ارکان مولانا اکبر نظام الدین، ملک معتصم خان، مرزا انور بیگ، نثار حسین حیدر آغا اور ذاکر حسین جاوید سے ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران تلنگانہ وقف بورڈ کی کارکردگی سے واقف کرایا گیا۔ خاص طور پر آمدنی میں اضافہ کے سلسلہ میں مہم اور جائیدادوں کے تحفظ کے اقدامات کی تفصیلات بیان کی گئیں۔ صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے بتایا کہ بورڈ کی اولین ترجیح اوقافی جائیدادوں کا تحفظ ہے تاکہ اس کی آمدنی میں اضافہ ہو۔ بورڈ کی آمدنی مسلمانوں کی فلاح و بہبود پر خرچ کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ غریبوں کے لیے مختلف اسکیمات کے آغاز کی تجویز ہے۔ محمد سلیم نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کے کرائے فی الوقت انتہائی کم ہے لہٰذا ان میں اضافہ کی مہم شروع کی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ حکومت نے 11 اوقافی جائیدادوں کو ڈیولپمنٹ پر لیز کرنے کی اجازت دی ہے۔ وقف بورڈ اپنے وسائل سے اوقافی جائیدادوں کی ترقی کا خواہاں ہے تاکہ اضافی آمدنی راست طور پر بورڈ کو حاصل ہو۔ انہوں نے سنٹرل وقف کونسل کی جانب سے تلنگانہ میں اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے لیے فنڈس فراہم کرنے کی خواہش کی۔ کونسل کے ذمہ داروں نے صدرنشین اور ارکان کو مشورہ دیا کہ وہ اوقافی جائیدادوں کے ڈیولپمنٹ کے سلسلہ میں تجاویز روانہ کریں جس پر کونسل غور کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ سنٹرل وقف کونسل نے غریب مسلمانوں کی تعلیم، پنشن اور تعلیمی امداد سے متعلق بعض اسکیمات ہیں جن سے تلنگانہ وقف بورڈ استفادہ کرسکتا ہے۔ سنٹرل وقف کونسل کے ذمہ داروں نے درگاہ سردار بیگ کامپلکس کا دورہ کیا اور وقف بورڈ کے عہدیداروں سے کرایوں میں اضافہ کے لیے کیئے جارہے اقدامات پر استفسار کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ حیدرآباد میں اوقافی جائیدادوں کے کرائے انتہائی کم ہیں اور مارکٹ ریٹ کے اعتبار سے اضافہ کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے وقف بورڈ کی کارکردگی کی ستائش کی اور صدرنشین کے علاوہ ارکان کو مبارکباد پیش کی۔ انہوں نے بتایا کہ کرائے داروں کو وقف ایکٹ کے تحت نوٹس دی جاسکتی ہے اور اضافہ نہ کرنے کی صورت میں تخلیہ کی کارروائی کی گنجائش موجود ہے۔ مولانا اکبر نظام الدین نے جو سنٹرل وقف کونسل سے وابستہ رہ چکے ہیں تلنگانہ میں اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے سلسلہ میں فنڈس کی فراہمی پر زور دیا۔ انہوں نے ڈیولپمنٹ کے سلسلہ میں بورڈ کی تجاویز سے واقف کرایا۔

TOPPOPULARRECENT