Monday , June 18 2018
Home / شہر کی خبریں / اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے ذریعہ اقلیتوں کی فلاح و بہبود کا منصوبہ

اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے ذریعہ اقلیتوں کی فلاح و بہبود کا منصوبہ

حیدرآباد۔ 14 ۔ جنوری (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی نے بتایا کہ اراضیات پر ناجائز قبضوں اور تعمیرات کو باقاعدہ بنانے کی اسکیم پر عمل آوری کے سلسلہ میں اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو مختلف گوشوں سے نمائندگی وصول ہوئی ہے کہ حیدرآباد اور اس کے اطراف واکناف اوقافی جائیدادوں پر

حیدرآباد۔ 14 ۔ جنوری (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی نے بتایا کہ اراضیات پر ناجائز قبضوں اور تعمیرات کو باقاعدہ بنانے کی اسکیم پر عمل آوری کے سلسلہ میں اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو مختلف گوشوں سے نمائندگی وصول ہوئی ہے کہ حیدرآباد اور اس کے اطراف واکناف اوقافی جائیدادوں پر قابض افراد اس اسکیم سے فائدہ اٹھاکر اوقافی جائیدادوں کو اپنی ملکیت بنانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے وعدہ کے مطابق تلنگانہ میں ایک ایک انچ اوقافی اراضی کا نہ صرف تحفظ کرے گی بلکہ وقف بورڈ کو جوڈیشیل اختیارات فراہم کرتے ہوئے مستقبل میں بھی ناجائز قبضوں کی روک تھام کو یقینی بنایا جائے گا ۔ جناب محمود علی نے کہا کہ اراضیات کو باقاعدہ بنانے کی اسکیم کا مقصد غریب خاندانوں کو فائدہ پہنچانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس اسکیم کی آڑ میں کوئی بھی اوقافی اراضی کو اپنی ملکیت نہیں بناسکتا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے ذریعہ اقلیتوں کی فلاح و بہبود کا منصوبہ رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں اوقافی جائیدادوں کی ترقی کے سلسلہ میں مرکزی وزارت اقلیت امور اور نیشنل میناریٹی ڈیولپمنٹ کارپوریشن سے تعاون حاصل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ جناب محمود علی نے بتایا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے ملاقات کے دوران اقلیتوں کی اسکیمات پر عمل آوری اور پرانے شہر کی ترقی کے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔ چیف منسٹر نے اقلیتی اسکیمات اور اقلیتی بجٹ کے خرچ کو یقینی بنانے کی ہدایت دی ، جس پر انہوں نے اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کو چیف منسٹر کی ترجیحات سے واقف کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اقلیتوں سے متعلق تمام اسکیمات پر عمل آوری کی کوشش کی جارہی ہے۔

تاہم بعض رکاوٹوں کے سبب آئندہ مالیاتی سال سے تمام اسکیمات پر عمل آوری یقینی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ کی بروقت اجرائی کے سلسلہ میں محکمہ فینانس کے عہدیداروں کو ہدایات دی گئی ہیں تاکہ اسکالرشپ ، فیس باز ادائیگی اور غریب خاندانوں سبسیڈی کی فراہمی جیسی اسکیمات پر عمل کیا جاسکے۔ جناب محمود علی نے بتایا کہ حکومت اقلیتی اداروں کا متحرک عہدیداروں کے تقررات عمل میں لا رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ آل انڈیا سرویسز کے عہدیداروں کے الاٹمنٹ میں تاخیر کے سبب نظم و نسق کی کارکردگی متاثر ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اقلیتی بہبود سمیت دیگر اہم محکمہ جات پر عہدیداروں کا تقرر عمل میں لایا ہے اور توقع ہے کہ حکومت کی اعلان کردہ اسکیمات پر موثر انداز میں عمل آوری ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ اور دیگر مخلوعہ عہدوں پر جلد ہی تقررات عمل میں لائے جائیں گے۔ اس کے علاوہ اقلیتی بہبود اور اس سے متعلق اداروں میں درکار اسٹاف کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے گا۔ جناب محمود علی نے کہا کہ مرکزی حکومت سے مختلف اسکیمات کے سلسلہ میں مناسب بجٹ حاصل کرنے کیلئے وہ عنقریب اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کے ساتھ نئی دہلی جائیں گے جہاں مرکزی وزارت اقلیتی امور اور دیگر متعلقہ محکمہ جات وزراء سے ملاقات کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مرکز کی اسکیمات میں مناسب حصہ داری کیلئے حکومت ہر ممکن اقدامات کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT