Thursday , November 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اوقافی جائیدادوں کے تحفظ میں کوتاہی

اوقافی جائیدادوں کے تحفظ میں کوتاہی

کھمم ضلع انسپکٹر آڈیٹر وقف کو چیف ایگزیکیٹیو آفیسر نے معطل کردیا
حیدرآباد۔/4ستمبر، ( سیاست نیوز) چیف ایکزیکیٹو آفیسر وقف بورڈ نے اوقافی جائیدادوں کے تحفظ میں کوتاہی اور ذمہ داریوں کی تکمیل میں ناکامی پر کھمم ضلع کے انسپکٹر آڈیٹر وقف کو معطل کردیا ہے۔ کھمم ضلع میں بعض اوقافی جائیدادوں پر ناجائز تعمیرات کی شکایات کا جائزہ لینے کیلئے عہدیدار مجاز جلال الدین اکبر نے خصوصی ٹیم کو روانہ کیا تھا۔ لاء آفیسر سید شبر باشاہ، ٹاسک فورس آفیسر محمد عظمت اللہ اور سرویئر خورشید احمد پر مشتمل ٹیم نے کھمم کا دورہ کیا لیکن مقامی انسپکٹر آڈیٹر محمد نصیر الدین نے ان سے کوئی تعاون نہیں کیا اور نہ ہی ملاقات کی۔ انسپکٹر آڈیٹر کی اس کوتاہی اور ذمہ داری کی تکمیل میں ناکامی پر انہیں فوری معطل کرتے ہوئے محمد مظہر الدین انسپکٹر آڈیٹر ورنگل کو کھمم ضلع کی زائد ذمہ داری دی گئی ہے۔ کھمم کا دورہ کرنے والی ٹیم نے چیف ایکزیکیٹو آفیسر کو رپورٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ درگاہ مولا تعلیم  کے تحت اوقافی اراضی پر بڑے پیمانے پر ناجائز قبضے کئے گئے ہیں۔ درگاہ حضرت سوندھے شہیدؒ قبرستان پر غیر قانونی طریقہ سے 61 ملگیات تعمیر کی گئیں۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اس علاقے میں اراضیات کی اہمیت کو دیکھتے ہوئے قبرستان کو مسمار کیا گیا اور ملگیات تعمیر کی گئیں۔ کمیٹی نے اسٹیشن مسجد اور اس سے متعلق اوقافی اراضی کا بھی دورہ کیا۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ متعلقہ انسپکٹرآڈیٹر کھمم نے خصوصی ٹیم سے ملاقات نہیں کی اور نہ ہی متعلقہ وقف ریکارڈ پیش کیا جس کے سبب تحقیقاتی ٹیم کو کارروائی میں دشواری پیش آئی۔ تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ پر چیف ایکزیکیٹو آفیسر نے عہدیدار مجاز سے مشاورت کے بعد انسپکٹر آڈیٹر کو معطل کردیا ہے۔ وقف بورڈ کے عہدیداروں نے بتایا کہ قبرستان کی اراضی پر ناجائز تعمیرات کے ذمہ دار متولی کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT