Monday , April 23 2018
Home / شہر کی خبریں / اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے پولیس اور ریونیو کا تعاون

اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے پولیس اور ریونیو کا تعاون

محمود علی اور این نرسمہا ریڈی کا صدر نشین وقف بورڈ محمد سلیم کو تیقن

حیدرآباد۔/17 مارچ، ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے سلسلہ میں محکمہ مال اور پولیس کی جانب سے مکمل تعاون کیا جائے گا۔ غیر مجاز قابضین کی برخواستگی کے سلسلہ میں حکومت سنجیدگی سے اقدامات کرے گی۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی اور وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی نے آج حج ہاوز میں منعقدہ تقریب سے خطاب کے دوران صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم کی توجہ دہانی پر یہ تیقن دیا۔ دونوں نے کہا کہ حیدرآباد میں جہاں کہیں بھی اوقافی اراضیات پر ناجائز قبضوں کی نشاندہی کی جائے گی محکمہ مال اور پولیس قبضوں کی برخواستگی کے سلسلہ میں وقف بورڈ سے تعاون کرے گا اور یہ اراضیات وقف بورڈ کے حوالے کردی جائیں گی۔ صدرنشین وقف بورڈ نے شکایت کی کہ حیدرآباد میں کئی اہم مقامات پر جائیدادوں کے تحفظ کے سلسلہ میں جب وقف بورڈ نے مساعی کی تو پولیس اور ریوینو حکام نے تعاون سے گریز کیا۔ انہوں نے اس سلسلہ میں عید گاہ گٹلہ بیگم پیٹ اور دیگر اہم اراضیات کا حوالہ دیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے کہا کہ چیف منسٹر اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے سلسلہ میں سنجیدہ ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ چیف منسٹر کے پاس منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس میں جب اوقافی جائیدادوں اور اراضیات کے بارے میں چیف منسٹر نے سوال کیا تو وقف بورڈ کے عہدیدار جواب دینے سے قاصر رہے جس کے بعد چیف منسٹر نے وقف بورڈ کو مہر بند کردیا تھا۔ انہوں نے بتایا کہ ریونیو حکام کے سروے میں 45000 ایکر اوقافی اراضی کی نشاندہی ہوئی ہے۔ انہوں نے صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم سے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے سلسلہ میں آپ آگے بڑھیں ہم مکمل تعاون کیلئے آپ کے ساتھ ہیں۔ ضلع کلکٹرس اور پولیس عہدیداروں کی جانب سے ضروری تعاون حاصل رہے گا۔ وزیر داخلہ این نرسمہا ریڈی نے کہا کہ پولیس کی جانب سے اوقافی جائیدادوں کے تحففظ کو نظرانداز کرنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ انہوں نے کہا کہ جہاں کہیں بھی ضرورت ہوگی پولیس مکمل تعاون کرے گی اور قابضین کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ قبل ازیں صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے کہا کہ ضلع کلکٹر کی جانب سے حیدرآباد کی مساجدکی تعمیر و مرمت اور تزئین نو کیلئے گرانٹ کی اجرائی قابل ستائش ہے۔ انہیں گرانٹ اِن ایڈ کے ساتھ مساجد سے منسلک اوقافی اراضیات کے تحفظ میں بھی دلچسپی لینی چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میں بعض مقامات پر پولیس اور ریونیو حکام کے عدم تعاون کے سبب وقف بورڈ کو دشواریوں کا سامنا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ان کی نمائندگی پر کلکٹر رنگاریڈی کو عیدگاہ گٹلہ بیگم پیٹ کی اوقافی اراضی کے سلسلہ میں ہدایات جاری کی۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی اراضیات کے تحفظ کے سلسلہ میں بورڈ سنجیدگی سے اقدامات کررہا ہے۔ اگر پولیس اور ریونیو کا تعاون حاصل ہو تو کئی قیمتی اوقافی جائیدادوں کو بچایا جاسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT