Tuesday , June 19 2018
Home / شہر کی خبریں / اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے لیے موثر پیروی پر زور

اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے لیے موثر پیروی پر زور

زیر دوران مقدمات کا حلفنامہ داخل کرنے میں تاخیر پر چیرمین وقف بورڈ تلنگانہ کی برہمی
حیدرآباد۔14۔ فروری (سیاست نیوز) صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے عدالتوں میں زیر دوران مقدمات کا حلفنامہ داخل کرنے میں تاخیر پر سخت برہمی کا اظہار کیا ۔ انہوں نے چیف اگزیکیٹیو آفیسر منان فاروقی اور لیگل سیل کے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ مقدمات کے کاؤنٹرس داخل کرنے کا عمل اندرون دو ماہ مکمل کرلیا جائے۔ ریٹائرڈ جج کی سرکردگی میں عہدیداروں کو ٹیم ورک کی طرح کام کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہائیکورٹ اور تحت کی عدالت میں سینکڑوں مقدمات زیر التواء ہے جن کا کاونٹر وقف بورڈ کو داخل کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے ضروری ہے کہ مؤثر انداز میں عدالتوں میں پیروی ہو، انہوں نے کہا کہ عدالتی کارروائیوں میں کسی بھی طرح کے تساہل کو برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ محمد سلیم نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ بورڈ کی ایک سالہ کارکردگی پر تفصیلی رپورٹ تیار کریں۔ گزشتہ ایک سال میں عدالتوں میں مقدمات کے موقف اور زیر التواء کاؤنٹرس کی تفصیلات ضلع واری سطح پر تیار کی جائے۔ محمد سلیم نے کہا کہ ضرورت پڑنے پر مزید ماہرین قانون کی خدمات حاصل کی جائیں گی۔ انہوں نے چیف اگزیکیٹیو آفیسر کو ذمہ داری دی کہ وہ کاؤنٹرس کی تیاری کی نگرانی کریں اور اس بات کو یقینی بنائیں کہ عدالتوں میں بروقت وقف بورڈ کی جانب سے حلفنامہ داخل کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ غیر مجاز قابضین سے ملی بھگت ثابت ہونے پر عہدیداروں اور ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے وضاحت کی کہ وقف بورڈ کے صدرنشین کا عہدہ انہوں نے اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کے عہد کے ساتھ قبول کیا ہے۔ وہ پوری دیانتداری اور اخلاص کے ساتھ کام کر رہے ہیں۔ لہذا وقف بورڈ کے عہدیداروں اور ملازمین کو بھی دیانتداری کے ساتھ فرائض انجام دینے چاہئے۔ محمد سلیم نے ریاست کے تمام انسپکٹر آڈیٹرس کا اجلاس طلب کرنے کا فیصلہ کیا تاکہ ہر ضلع میں اوقافی جائیدادوں کے موقف کا پتہ چلایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ اراضی سروے میں اوقافی جائیدادوں کے اندراج کے بارے میں وقف انسپکٹرس سے تفصیلات حاصل کی جائیں گی۔ بورڈ کا آئندہ اجلاس 24 فروری کو طلب کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ 24 فروری کو وقف بورڈ کی تشکیل کو ایک سال مکمل ہوجائے گا۔ صدرنشین وقف بورڈ ایک سال کی تکمیل پر اجلاس میں بعض اہم فیصلے کرنا چاہتے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT