Thursday , January 18 2018
Home / ہندوستان / اوقاف شاہی کیلئے نئے بورڈ کی تشکیل

اوقاف شاہی کیلئے نئے بورڈ کی تشکیل

بھوپال ۔ 17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) منصور علی خان پٹوڈی مرحوم کی بڑی دختر صبا سلطان نے جو اوقات شاہی کی متولی بھی ہیں، شاہی جائیدادوں کی دیکھ بھال کے کام کو غیرمرکوز کرتے ہوئے اس کے تمام مسائل کی یکسوئی کیلئے ایک پانچ رکنی عاملہ بورڈ تشکیل دی ہیں۔ صبا سلطان نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے گذشتہ روز کہا تھا کہ وہ اوقات شاہی سے متعل

بھوپال ۔ 17 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) منصور علی خان پٹوڈی مرحوم کی بڑی دختر صبا سلطان نے جو اوقات شاہی کی متولی بھی ہیں، شاہی جائیدادوں کی دیکھ بھال کے کام کو غیرمرکوز کرتے ہوئے اس کے تمام مسائل کی یکسوئی کیلئے ایک پانچ رکنی عاملہ بورڈ تشکیل دی ہیں۔ صبا سلطان نے اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے گذشتہ روز کہا تھا کہ وہ اوقات شاہی سے متعلق تمام مسائل کی یکسوئی کا عزم کرچکی ہیں اور اس مقصد کی تکمیل کیلئے اپنے فرائض انجام دینے کیلئے تیار ہوچکے ہیں تاکہ یہ بتایا جائے کہ اوقاف کا مطلب کیا ہوتا ہے اس کے مطابق ہی کام کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ نئی عاملہ کمیٹی کے قیام اور کاموں کو غیرمرکوز کرنے کی وجہ دراصل بورڈ میں مزید شفافیت پیدا کرنا ہے۔ صبا سلطان نے کہا کہ نئے ایگزیکیٹیو بورڈ کے اعلان کے بعد ماضی کا بورڈ آف ڈائرکٹر ازخود ختم ہوجاتا ہے۔

اوقات شاہی کے جدید پانچ رکنی عاملہ بورڈ میں ریلائبل گروپ آف انڈسٹریز کے چیرمین سکندرآباد حفیظ خان، مدھیہ پردیش وقف بورڈ کے سابق صدرنشین غفران اعظم، سابق سکریٹری اور ریٹائرڈ ڈپٹی کلکٹر عمر فاروق کھتانی، ریٹائرڈ آئی ایف ایس محمد ہاشم اور سابق جنرل منیجر بی ایس ای این زیڈ یو علوی ارکان کی حیثیت سے شامل کئے گئے ہیں۔ صبا سلطان نے کہا کہ سکندر حفیظ خان کو سعودی عرب کے دو مقدس شہروں مکہ معظمہ اور مدینہ منورہ میں بھوپال کے شاہی رباطوں کے متعلق امور کی دیکھ بھال کے اختیارات دیئے گئے ہیں۔ واضح رہیکہ ماضی میں بھوپال کے نواب حمیداللہ خان نے بھوپال، رائے سین اور سیغور اضلاع سے تعلق رکھنے والے عازمین کے قیام کیلئے یہ رباط تعمیر کئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT