Friday , June 22 2018
Home / شہر کی خبریں / اوما مادھو ریڈی اور فرزند سندیپ کی آج ٹی آر ایس میں شمولیت

اوما مادھو ریڈی اور فرزند سندیپ کی آج ٹی آر ایس میں شمولیت

حیدرآباد ۔13۔ ڈسمبر (سیاست نیوز) تلگو دیشم کی سابق وزیر اوما مادھو ریڈی اور ان کے فرزند سندیپ ریڈی نے آج تلگو دیشم پارٹی سے استعفیٰ دیدیا اور استعفیٰ کا مکتوب پارٹی کے قومی صدر این چندرا بابو نائیڈو کو روانہ کردیا گیا ۔ دونوں قائدین کل 14 ڈسمبر کو 11 بجے دن تلنگانہ بھون میں اپنے حامیوں کے ساتھ ٹی آر ایس میں شامل ہوجائیں گے۔ اوما مادھو ریڈی نے اپنے فرزند سندیپ ریڈی صدر ضلع تلگو دیشم بھونگیر کے ہمراہ کل چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے ملاقات کرتے ہوئے ٹی آر ایس میں شمولیت کا ارادہ ظاہر کیا تھا ۔ اوما مادھو ریڈی کی ٹی آر ایس میں شمولیت سے ایک طرف تلنگانہ میں تلگو دیشم کو نقصان ہوگا تو دوسری طرف نلگنڈہ ضلع میں ٹی آر ایس پارٹی مستحکم ہوسکتی ہے۔ اوما مادھو ریڈی کے ہمراہ تلگو دیشم کے کئی منڈل صدور اور قائدین سرپنچ سابق ایم پی ٹی سی اور دیگر عوامی نمائندے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کریں گے ۔ چندرا بابو نائیڈو وزارت میں اوما مادھو ریڈی کانکنی کی وزیر تھیں۔ اپنے شوہر اے مادھو ریڈی کی نکسلائیٹس حملہ میں ہلاکت کے بعد سیاست میں قدم رکھا اور بھونگیر کے ضمنی چناؤ میں کامیابی حاصل کی۔ انہوں نے متحدہ آندھراپردیش میں ضلع نلگنڈہ میں تلگو دیشم کو مستحکم کرنے میں اہم رول ادا کیا۔ 2014 ء میں انہیں تلگو دیشم امیدوار کی حیثیت سے شکست کا سامنا کرنا پڑا ۔ نئے اضلاع کی تشکیل کے بعد ان کے فرزند سندیپ ریڈی بھونگیر ضلع کے پہلے تلگو دیشم صدر مقرر کئے گئے۔ انہوں نے تلنگانہ کی ترقی کیلئے چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے اقدامات سے متاثر ہوکر ٹی آر ایس میں شمولیت کا فیصلہ کیا ہے ۔ چندرا بابو نائیڈو کو روانہ کردہ مکتوب میں اوما مادھو ریڈی نے اپنے شوہر اے مادھو ریڈی کی تلگو دیشم پارٹی سے طویل وابستگی کا ذکر کیا۔

TOPPOPULARRECENT