Monday , December 11 2017
Home / Top Stories / اونا دوہرایاگیا: حاملہ عورت اور اس کے شوہر پر پائپ او رلاٹھیوں سے حملہ ‘ جانورو ں کو کھیت چرنے سے انکار کا خمیازہ

اونا دوہرایاگیا: حاملہ عورت اور اس کے شوہر پر پائپ او رلاٹھیوں سے حملہ ‘ جانورو ں کو کھیت چرنے سے انکار کا خمیازہ

احمدآباد: پولیس کے مطابق منگل کے روزایک نچلی ذات کی حاملہ عورت اور اس کے شوہر نے ایک اعلی ذات والے گروپ کے جانوروں کو ان کے کھیت میں چرنے سے روکنے سے انکار پر کو لاٹھیوں سے پیٹا گیا ۔

مغربی گجرات میں پیش ائے مذکورہ حملہ واقعہ دلتوں کے خلاف ایک تازہ واقعہ ہے‘ جو ہندوستان کے سماجی نظام کے لئے بدنما داغ ہے۔

پولیس نے کہاکہ ریکھا سنکھٹ (30)جو چھ ماہ کی حاملہ ہے اور اس کے شوہربابو بھائی سنکھٹ(35)کو اونا ٹاؤن میں حملہ کے بعد مقامی سیول اسپتال میں علاج کے لئے شریک کیاگیا‘ اور ایک شکایت بھی درج کرائی گئی۔

اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے مقامی سب انسپکٹر ایم اے والا نے کہاکہ ’’بابو اور اس کی بیوی کے ساتھ اعلی ذات والوں نے زیادتی کی ہے‘‘۔انہوں نے مزیدکہاکہ ’’ اس سلسلے میں ایک شکایت درج کی گئی اور مزید تحقیقات جاری ہے‘‘۔والا نے بتایا کہ ماں کے پیٹ میں موجود بچے کو کوئی نقصان نہیں ہوا‘ مگر ریکھا کو پیروں اور کاندھے پر زخم ائے ہیں۔

.ایسے ہی ایک واقعہ کے دوران ماہ ستمبر میں نچلی ذات کی ایک حاملہ عورت اور اس کی فیملی کو گائے کی غلاظت صاف کرنے سے انکار پر زدکوب کیاگیا تھا۔دلت کو بنیادی طور پر ’’ اچھوت ‘‘ کے نام سے جانا جاتا ہے اور یہ جہاں پر جانور آزادی کے ساتھ گھومتے ہیں ان علاقوں کی گلیوں میں پڑی مردہ گائیوں کو ہٹانے کاکام کرتے ہیں ۔

دلت سماج میں غم وغصہ کی لہر اس وقت دوڑ گئی جب جولائی میں گاؤ رکشکوں نے غلطی سے دلت دیہاتوں کے ساتھ یہ سمجھ کر مار پیٹ کی کہ وہ گائے کو ہلاک کرنے کی ذمہ دارہیں۔

جس کو ہندوستان میں مقدس سمجھا جاتا ہے۔اور انہیں باندھ کر عوام کے سامنے پیٹا گیا۔اس واقعہ کا ایک ویڈیو جو گجرات کے اونا ٹاؤن میں پیش آیا خوب وائیرل ہوا اور اور دلتوں کو ذات پات کی بنیاد پر امتیاز کے خلاف مشتعل کرنے کی وجہہ بنا

TOPPOPULARRECENT