Wednesday , December 13 2017
Home / شہر کی خبریں / اوور سیز اسکالر شپ کی اجرائی میں تاخیر پر اظہار افسوس

اوور سیز اسکالر شپ کی اجرائی میں تاخیر پر اظہار افسوس

انتخاب کے باوجود نامعلوم وجوہات کے باعث رقم جاری نہیں کی گئی ، ڈپٹی چیف منسٹر برہم
حیدرآباد۔/8 ڈسمبر، ( سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے اوورسیز اسکالر شپ کی اجرائی میں تاخیر پر افسوس کا اظہار کیا اور منتخب امیدواروں کو یقین دلایا کہ بہت جلد پہلی قسط کی رقم جاری کردی جائے گی۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے محمد محمود علی نے مختلف گوشوں سے اسکالر شپ کی اجرائی میں تاخیر کی شکایات کا حوالہ دیا اور کہا کہ انہیں اس بات پر افسوس ہے کہ طلباء کے انتخاب کے باوجود نامعلوم وجوہات کے سبب عہدیداروں نے پہلی قسط کی رقم جاری نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ عہدیداروں کو سخت ہدایات جاری کی گئی ہیں اور اندرون دو یوم بہر صورت پہلی قسط جاری کردی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ ایسے طلباء جنہوں نے تمام درکار دستاویزات داخل کردیئے ہیں انہیں رقم کی اجرائی میں کوئی تاخیر نہیں ہوگی۔ محمود علی نے حیدرآباد میں منتخب کئے گئے 137 طلباء میں سے کسی ایک کو بھی تاحال رقم جاری نہ کئے جانے پر ناراضگی کا اظہار کیا اور کہا کہ متعلقہ عہدیداروں کو اس سلسلہ میں میمو جاری  کیا گیا ہے اور جمعرات تک پہلی قسط جاری کرنے کیلئے پابند کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس اسکیم کے آغاز کا مقصد غریب اور مستحق اقلیتی طلباء کو بیرونی یونیورسٹیز میں اعلیٰ تعلیم کی سہولت فراہم کرنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں یہ اپنی نوعیت کی منفرد اسکیم ہے۔ محمود علی نے آٹو رکشا اسکیم کے منتخب افراد سے اپیل کی کہ وہ نہ صرف بینک قرض پابندی سے ادا کریں بلکہ زائد رقم کی بچت کرتے ہوئے اپنے بچوں کے تابناک مستقبل کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے بتایا کہ تلنگانہ حکومت آئندہ مالیاتی سال اقلیتی بہبود کے بجٹ میں اضافہ کا منصوبہ رکھتی ہے۔ انہوں نے اقلیتوں سے اپیل کی کہ وہ حکومت کی جانب سے شروع کی گئی اسکیمات سے بھرپور استفادہ کریں اور عوام میں شعور بیداری کی مہم چلائی جائے۔

TOPPOPULARRECENT