Friday , December 15 2017
Home / اضلاع کی خبریں / اوٹکور میں فرقہ پرستوں کی شرانگیزی

اوٹکور میں فرقہ پرستوں کی شرانگیزی

مسلمانوں کے مکانات پر پتھراؤ ، بھارت ماتا کی جئے کے نعرے
اوٹکور۔/23مارچ، ( سیاست نیوز) بھارت ماتا کی جئے، جیسے مذہبی منافرت کا نعرہ لگاتے ہوئے آر ایس ایس، اے بی وی پی ، جن سنگھ جیسے مذہبی شرپسند عناصر نے رات کے اوقات میں شورشرابہ کرتے ہوئے شراب پی کر رقص کرتے ہوئے ہولی تہوار منایا۔ ٹھیک ایک بجے جناب محمد مبین شاہ کے مکان پر پتھراؤ کیا۔ اس کے علاوہ جناب عبدالقدیر بنڈہ کے مکان پر شراب پی کر بوتل کے شیشے ڈالے گئے اور منافرت کے گیت لگاتے ہوئے جناب محبوب مڑکی کے گھر پر موجود ٹھیلہ بنڈی کو توڑا اور بنڈی کی اشیاء لیکر چلے گئے۔ اس کے علاوہ محمد سلام الدین گرنی کے مکان پر پتھراؤ کیا۔ آدھی رات کو اوٹکور کے مختلف شاہراہوں پر ہولی جلائی ۔ ساری رات اشرار نے مسلمانوں کے محلہ جات میں بہ آواز بلند شرپسندی کرتے ہوئے جئے رام اور بھارت ماتا جیسے نعرے لگائے۔ مسلمانوں کو  رات میں سونا حرام کردیا۔ ڈرکے مارے مسلمانوں نے اپنے اپنے مکانات میں خوف و ہراس کی نیند سے شب گذاری کی۔ بعض محلہ جات میں تو جبراً تعمیراتی اشیاء اور لکڑیاں وغیرہ لے جاکر ہولی جلائی۔ اوٹکور ایک حساس مقام ہے ضلع ایس پی پولیس کی جانب سے اوٹکور کے تمام مذہبی مقامات جیسے مساجد اور درگاہوں پر پولیس تو بھاری تعداد میں تعینات تھی لیکن پولیس صرف تماشائی بنی ہوئی تھی۔ اس طرح امن وامان کیلئے پولیس کی کوئی کارکردگی ٹھیک نہیں رہی۔ اشرار ڈی جے ساؤنڈ لگاکر رقص کرتے ہوئے دکھائی دیئے۔ جناب محمد مبین بنڈہ، جناب عبدالقدیر، جناب محبوب مڑکی نے اپنے اپنے نقصانات پر مشتمل ایک یادداشت مقامی پولیس جناب پروین کمار ، ایس آئی اوٹکور کو پیش کیا۔ اشرار کو جلد از جلد گرفتار کرنے اور نقصانات کی پابجائی کا حکومت اور ایم ایل اے رام موہن ریڈی سے پرزور مطالبہ کیا ہے ۔ اوٹکور میں ہولی کا تہوار تو منایا گیا لیکن اوٹکور کی سڑکوں کی حالت اتنی خراب ہوگئی کہ راستہ چلنا مشکل ہوگیا۔ سڑکوں پر گلابی رنگوں اور دیگر ملاوٹی اشیاء جس میں کانچ وغیرہ بھری ہوئی تھی۔ راستہ چلنا بہت تکلیف دہ ہوا۔ ہولی کے پیش نظر اوٹکور میں دینی مدارس کو ایک یوم تعطیل کا اعلان کیا گیا تاکہ مدرسہ آنے والے معصوم طلباء کو نقصان نہ ہو۔

TOPPOPULARRECENT