Saturday , August 18 2018
Home / ہندوستان / اوڑی سیکٹر میں گولہ باری

اوڑی سیکٹر میں گولہ باری

سرینگر، 22 فروری (سیاست ڈاٹ کام) شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے اوڑی سیکٹر میں پاکستان کی طرف سے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی ہے ۔ معاہدے کی خلاف ورزی کا یہ تازہ واقعہ جمعرات کی صبح پیش آیا۔ پاکستانی فائرنگ کے نتیجے میں تین رہائشی مکانات کو نقصان پہنچا ہے ۔ ریاستی پولیس نے احتیاطی طور پر چورنڈا، سلکوٹ، تلہ واری، تھجل اور سونی نامی دیہات کے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کردیا ہے ۔ ریاستی پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا ‘چارنڈا اوڑی میں پاکستان کی طرف سے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی۔ پولیس اور مقامی انتظامیہ لوگوں کو مدد فراہم کرنے میں مصروف ہے ‘۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان کی جانب سے بھارتی فوج کی اگلی چوکیوں اور سرحدی دیہات کو نشانہ بنایا جارہا ہے ۔ وزارت دفاع کے ترجمان کرنل راجیش کالیا نے یو این آئی کو بتایا کہ پاکستان کی طرف سے اوڑی سیکٹر میں بلااشتعال فائرنگ اور مارٹر شلنگ کی گئی۔ انہوں نے بتایا ‘پاکستان کی طرف سے فائرنگ کا سلسلہ جمعرات کی صبح آٹھ بجے شروع ہوا۔ یہ سلسلہ وقفہ وقفہ سے جاری ہے ۔ ہمارے فوجیوں نے جوابی کاروائی کرکے پاکستانی فوجی بنکروں کو نشانہ بنایا’۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پاکستانی شلنگ کی وجہ سے تین رہائشی مکانات کو نقصان پہنچا ہے ۔ ان میں سے تلہ واری میں ایک رہائشی مکان مکمل طور پر تبادہ ہوگیا ہے ۔ 20 فروری کو پاکستان کی طرف سے ایل اوی سی کے ٹنگڈار سیکٹر میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی جس کے نتیجے میں بارڈر سیکورٹی فورس کا ایک اہلکار جاں بحق ہوا۔ اس سے قبل بارہمولہ میں ایل او سی کے حاجی پیر سیکٹر میں 19 فروری کو پاکستان کی فائرنگ سے ایک خاتون سمیت 3 عام شہری زخمی ہوئے ۔ انتظامیہ نے احتیاطی طور پر تھجل اور سونی نامی دو دیہات کے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا تھا۔ واضح رہے کہ رواں برس کے گذشتہ 50 دنوں کے دوران جموں میں ایل او سی اور بین الاقوامی سرحد پر شدید کشیدگی دیکھی گئی جس دوران قریب 20 شہری و فوجی اہلکار جاں بحق ہوئے ۔ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان 1999 ء کے تنازعے کے بعد سنہ 2003 میں جنگ بندی کا معاہدہ طے پایا۔ تاہم جنگ بندی کے معاہدے کے باوجود سرحدوں پر فائرنگ کے واقعات پیش آتے رہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT