Monday , September 24 2018
Home / Top Stories / اُترپردیش میں پولیس کے ظلم کا شکار خاتون فوت

اُترپردیش میں پولیس کے ظلم کا شکار خاتون فوت

بارہ بنکی (اترپردیش)۔ 7 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ایک جرنلسٹ کی والدہ جس نے یہ الزام عائد کیا تھا کہ اس کے شوہر کی رہائی کیلئے رشوت دینے سے انکار پر ایک پولیس اسٹیشن میں پولیس عہدیداروں نے اسے زندہ جلا دیا، آج ہاسپٹل میں زخموں سے جانبر نہ ہوسکی جس کے ساتھ حکومت نے اس واقعہ کی مجسٹرئیل تحقیقات کروانے کا حکم دیا ہے۔ چیف منسٹر اُترپردیش اکھ

بارہ بنکی (اترپردیش)۔ 7 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ایک جرنلسٹ کی والدہ جس نے یہ الزام عائد کیا تھا کہ اس کے شوہر کی رہائی کیلئے رشوت دینے سے انکار پر ایک پولیس اسٹیشن میں پولیس عہدیداروں نے اسے زندہ جلا دیا، آج ہاسپٹل میں زخموں سے جانبر نہ ہوسکی جس کے ساتھ حکومت نے اس واقعہ کی مجسٹرئیل تحقیقات کروانے کا حکم دیا ہے۔ چیف منسٹر اُترپردیش اکھیلیش یادو نے بتایا کہ تحقیقاتی رپورٹ میں قصوروار پائے جانے والے پولیس اہلکاروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ ایس پی ضلع بارہ بنکی مسٹر عبدالحمید نے بتایا کہ متاثرہ خاتون آج لکھنؤ ہاسپٹل میں علاج کے دوران فوت ہوگئی۔ اگرچیکہ پولیس نے یہ دعویٰ کیا ہے کہ درمیانی عمر کی ایک خاتون نے کوٹھی پولیس اسٹیشن میں پولیس کی جانب سے بے عزتی اور گالی گلوج سے دلبرداشتہ ہوکر اپنے آپ کو جلا لیا لیکن متاثرہ خاتون کا الزام ہے کہ پولیس اسٹیشن کے انچارج اور سب انسپکٹر نے اس وقت آگ لگادی جب انہوں نے اپنے شوہر کی رہائی کیلئے ایک لاکھ روپئے رشوت دینے سے انکار کردیا تھا۔ پولیس کے مطابق نیتو اپنے شوہر کے بارے میں جانکاری کیلئے پولیس اسٹیشن پہونچی جسے ہفتہ کے دن حراست میں لے لیا گیا تھا۔ پولیس اسٹیشن کے انچارج رام صاحب سنگھ اور سب انسپکٹر اکھیلیش راؤ نے اس خاتون کے ساتھ بدتمیزی کرتے ہوئے باہر ڈھکیل دیا جس کے دوران خاتون نے اپنے آپ پر پٹرول چھڑک کر آگ لگالی۔

اس خاتون کو شدید جھلسی ہوئی حالت میں ڈسٹرکٹ ہاسپٹل رجوع کیا گیا۔ تشویشناک حالت کے پیش نظر اسے لکھنؤ منتقل کردیا گیا۔ کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے چیف منسٹر نے بتایا کہ اس واقعہ کی مجسٹرئیل تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے اور رپورٹ میں جو کوئی بھی قصوروار پائے جائیں گے، ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ جہاں تک پولیس کے خلاف کارروائی کا سوال ہے، حکومت نے اس خصوص میں کارروائی شروع کردی ہے۔ ضلع ایس پی نے دونوں پولیس عہدیداروں کو معطل کردیا ہے اور قانون تعزیرات ہند کی مختلف دفعات کے تحت ایف آئی آر درج کرلیا گیا۔ پولیس نے بتایا کہ متوفی خاتون کے شوہر پر رام نارائن کو موضع گاہا (Gaha) میں ایک لڑکی سے چھیڑچھاڑ کے واقعہ پر فائرنگ کے سلسلے میں پوچھ تاچھ کیلئے ہفتہ کی شب پولیس اسٹیشن لایا گیا اور مذکورہ خاتون اپنے شوہر کے بارے میں جانکاری کیلئے پہنچی تو پولیس عہدیداروں نے بدتمیزی سے پیش آیا۔ اس خاتون کا بیٹا ایک مقامی ہندی اخبار سے وابستہ ہے۔ جرنلسٹ کی والدہ کو زندہ جلادینے کا واقعہ ایسے وقت پیش آیا جب ضلع شاہجہاں پور میں بعض پولیس عہدیداروں نے غنڈوں کے ساتھ مل کر ایک ماہ قبل ایک جرنلسٹ جوگیندر سنگھ کو نذرآتش کردیا تھا۔ متوفی سنگھ کے افراد خاندان نے اس واقعہ کیلئے اُترپردیش کے ایک وزیر رام مورتی ورما کو موردالزام ٹھہرایا تھا۔

TOPPOPULARRECENT