Friday , November 17 2017
Home / ہندوستان / اُردو سارے ملک کی زبان : حامد انصاری

اُردو سارے ملک کی زبان : حامد انصاری

نئی دہلی۔ 15 اگست (سیاست ڈاٹ کام) اُردو صرف مسلمانوں کی زبان نہیں بلکہ سارے ملک کی زبان ہے۔ سابق نائب صدرجمہوریہ حامد انصاری نے آج یہ بات کہی اور بتایا کہ اردو دنیا بھر میں بولی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2011ء مردم شماری کے مطابق ملک میں تقریباً 180 ملین مسلمان ہیں اور ان میں صرف 85 ملین افراد کی زبان اُردو ہے۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ اردو کو سیاسی رنگ دیا جارہا ہے اور یہ تاثر دیا جاتا ہے کہ یہ صرف مسلمانوں کی زبان ہے۔ وہ آج آن لائن نیوز پورٹل ’’دی وائر‘‘ کے اردو ایڈیشن کی رسم اجراء کے موقع پر خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ جنوبی ہند، مغربی بنگال اور ملک کے دیگر حصوں میں اردو بولنے والے بہ آسانی مل جاتے ہیں۔ یہ سارے ملک کی زبان ہے اور آج اردو بولنے والے کینیڈا، امریکہ، آسٹریلیا اور دنیا کے دیگر حصوں میں بھی موجود ہیں۔ جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا اردو زبان کو روزگار سے مربوط ہے، انہوں نے نفی میں جواب دیا، اس کا یہ مطلب نہیں کہ کوئی اردو زبان ہی نہ سیکھے۔ انہوں نے کہا کہ یہی اردو کی سب سے بڑی خامی ہے لیکن اردو زبان کی نمایاں خصوصیت یہ ہے کہ اس زبان میں کوئی بات جس موثر انداز میں پیش کی جاسکتی ہے، وہ کسی اور زبان میں ممکن نہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT