Wednesday , December 13 2017
Home / دنیا / آتش فشاں والے خطرناک علاقہ سے 50,000 افراد کا تخلیہ

آتش فشاں والے خطرناک علاقہ سے 50,000 افراد کا تخلیہ

کرانگا سیم (انڈونیشیا) 25 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) انڈونیشیا کے معروف تفریح گاہی جزیرہ بالی میں آتش فشاں پھٹ پڑنے کے خوف سے تقریباً 50,000 افراد نے اپنے مکانات کا تخلیہ کردیا۔ یاد رہے کہ سیاحتی مرکز کوٹا سے 75 کیلو میٹر کے فاصلہ پر واقع ماؤنٹ اگنگ گزشتہ ماہ اگسٹ سے ہی راکھ اور چنگاریاں اُل رہا ہے جس سے وہاں رہنے والوں کو خوف پیدا ہوگیا ہے کہ یہ کسی بھی وقت لاوا اُگلتے ہوئے انتہائی جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے اور اگر ایسا ہوا تو گزشتہ 50 سالوں میں پہلی بار ہوگا۔ دریں اثناء انڈونیشیاء کی میٹگیشن ایجنسی نے اعداد و شمار بتاتے ہوئے کہاکہ 48,540 افراد نقل مکانی کرچکے ہیں۔ البتہ اس تعداد میں اضافہ بھی ہوسکتا ہے کیوں کہ آتش فشاں کے خطرناک زون میں زائداز 60,000 افراد آباد ہیں۔ دوسری طرف ڈیساسٹر میٹگیشن ایجنسی کے ترجمان سوٹوپو پروونو گروہو نے بتایا کہ وہاں اب بھی ایسے سینکڑوں افراد ہیں جو تخلیہ کرنا نہیں چاہتے۔ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہاکہ پہلی وجہ یہ ہے کہ آتش فشاں اب تک پھٹا نہیں ہے اور دوسری وجہ یہ ہے کہ وہ لوگ اپنے مویشیوں کے لئے بھی تشویش میں مبتلا ہیں۔ آتش فشاں کے خطرناک زون سے تقریباً 2000 گایوں کا بھی تخلیہ کروایا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT