Tuesday , January 23 2018
Home / Top Stories / آج دہلی میں کسان ریالی، راہول گاندھی مرکز توجہ

آج دہلی میں کسان ریالی، راہول گاندھی مرکز توجہ

نئی دہلی 18 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نائب صدر کانگریس راہول گاندھی تقریباً دو مہینے کی غیر حاضری کے بعد آج عوام کے سامنے پیش ہوئے اور مختلف ریاستوں سے تعلق رکھنے والے کسانوں سے ملاقات کی۔ اُنھوں نے کانگریس کی جانب سے دہلی میں کل منعقد کی جارہی کسان ریالی سے ایک دن قبل کسانوں سے اُن کی رائے حاصل کی۔ نریندر مودی حکومت نے پیشرو یو پی اے حکو

نئی دہلی 18 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) نائب صدر کانگریس راہول گاندھی تقریباً دو مہینے کی غیر حاضری کے بعد آج عوام کے سامنے پیش ہوئے اور مختلف ریاستوں سے تعلق رکھنے والے کسانوں سے ملاقات کی۔ اُنھوں نے کانگریس کی جانب سے دہلی میں کل منعقد کی جارہی کسان ریالی سے ایک دن قبل کسانوں سے اُن کی رائے حاصل کی۔ نریندر مودی حکومت نے پیشرو یو پی اے حکومت کی جانب سے متعارف کردہ اراضی قانون میں تبدیلی کی ہے۔ راہول گاندھی نے اِس ضمن میں کسانوں کی رائے حاصل کی۔ اِس موقع پر اُن کے ہمراہ راجستھان پردیش کانگریس کمیٹی کے سربراہ سچن پائلیٹ بھی تھے جنھوں نے اترپردیش، ہریانہ، راجستھان، پنجاب اور مدھیہ پردیش کے کسانوں کے وفود سے ملاقات کی۔ اُنھوں نے اپنی رہائش گاہ پر دیگر کسانوں کے نمائندہ گروپس سے بھی مشاورت کی۔ کانگریس نائب صدر توقع ہے کہ کل متنازعہ اراضی بل کے خلاف کسان ریالی کی قیادت کریں گے۔ وہ اِس ریالی کو خطاب کرنے والے ہیں۔ لوک سبھا انتخابات کے بعد جس میں کانگریس نے انتہائی ناقص مظاہرہ کیا تھا، راہول گاندھی کی قائدانہ صلاحیتوں پر تنقیدیں کی جارہی تھیں اور اِس پس منظر میں کل کی ریالی کو نمایاں اہمیت حاصل ہے۔ کل کی یہ ریالی تاریخی ہوگی جس میں ملک بھر سے لاکھوں کسان دہلی میں جمع ہوں گے اور بی جے پی حکومت کی ناکامیوں کو بے نقاب کیا جائے گا۔ کسانوں کا یہ موقف ہے کہ اراضیات بِل کا مقصد چند افراد کو فائدہ پہنچانا ہے اور اِس بل کے ذریعہ حکومت کسانوں کے ساتھ دھوکہ دہی کررہی ہے۔ بی جے پی سازش کے تحت چھوٹے کسانوں کی اراضیات حاصل کرنا چاہتی ہے۔ پارٹی کے سینئر لیڈر نے بتایا کہ راہول گاندھی اِس ریالی سے خطاب کے علاوہ لوک سبھا میں بھی اِس متنازعہ بل کے بارے میں بات کریں گے۔

توقع ہے کہ وہ پیر سے شروع ہورہے بجٹ سیشن کے دوسرے حصہ میں شریک ہوں گے۔ راہول گاندھی کی طویل سیاسی رخصت کے بعد اتوار کو ہونے والی یہ ریالی اُن کی پہلی عوامی سرگرمی ہوگی۔
آج بھٹا پرسول دیہات کے کسانوں کے وفد نے بھی راہول گاندھی سے ملاقات کی۔ یاد رہے کہ 2011 ء میں اُنھوں نے کسانوں کی اراضی زبردستی حاصل کرنے کے خلاف یہیں سے اپنی پدیاترا شروع کی تھی۔ اِس احتجاج کے نتیجہ میں اراضی حصول میں شفافیت اور خاطر خواہ معاوضہ کے علاوہ بازآبادکاری اور ازسرنو آبادکاری کے حق سے متعلق بِل 2013 ء کی منظوری عمل میں آئی تھی۔ لوک سبھا انتخابات میں پارٹی کے ناقص مظاہرہ کے بعد راہول گاندھی نے عملی سیاست سے عارضی طور پر رخصت حاصل کرلی تھی اور اُنھوں نے پارلیمنٹ کے جاری بجٹ سیشن میں بھی حصہ نہیں لیا تھا۔ اُن کی غیر حاضری پر سیاسی حلقوں میں مختلف قیاس آرائیاں کی جارہی تھیں حالانکہ اُنھوں نے غیر حاضری کی اطلاع پارٹی صدر کو دی تھی۔ راہول گاندھی نے رخصت ختم ہونے کے بعد پھر ایک بار پارٹی سرگرمیوں میں حصہ لینا شروع کردیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT