Friday , August 17 2018
Home / سیاسیات / آر ایس ایس کی کیا خامی تھی جوخوبی بن گئی

آر ایس ایس کی کیا خامی تھی جوخوبی بن گئی

نئی دہلی 8 جون (سیاست ڈاٹ کام) پرنب مکرجی کے دورۂ آر ایس ایس ہیڈکوارٹر کے بارے میں کانگریس کے اندرون کافی بے چینی اور تلملاہٹ کے بعد پارٹی لیڈر منیش تیواری نے آج سابق صدرجمہوریہ سے استفسار کیاکہ کیوں اُنھوں نے وہاں جانے اور قوم پرستی کے بارے میں مخاطب کرنے کا فیصلہ کیا جبکہ اُن جیسے نوجوان کانگریسیوں نے سنگھ پریوار کے خلاف متنبہ کردیا تھا۔ ٹوئٹر کے ذریعہ اپنی بات پیش کرتے ہوئے سابق مرکزی وزیر نے پرنب مکرجی سے بعض چبھتے ہوئے سوالات کئے ہیں کہ آر ایس ایس کے تعلق سے پہلے کیا بُرائی دیکھنے میں آتی تھی جو اب خوبی بن گئی ہے اور آیا وہ سنگھ پریوار کو اصل دھارے میں لانے کی کوشش کررہے ہیں؟ ماضی کے بعض واقعات سے تقابل کرتے ہوئے تیواری نے کہاکہ 1938 ء کے میونخ معاہدہ کے بعد دیگر ملکوں کو یہ بھرم ہوگیا تھا کہ اُنھوں نے نازیوں کے ساتھ امن طے کرالیا ہے حالانکہ کچھ ہی عرصہ میں نازیوں نے یوروپ کو کچل دیا۔ تیواری نے ویٹرن کانگریسی کو یہ بھی بتایا کہ اِس دورہ کے پس پردہ اُن کا جو کچھ بھی مقصد رہا ہے اُس سے قطع نظر اِس دورے کو یہی کوشش کے طور پر دیکھا جائے گا کہ آر ایس ایس کو سیکولر اور تکثیری دھارے میں لانے کی کوشش ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT