Tuesday , June 19 2018
Home / Top Stories / آر بی آئی شرح سود میں کٹوتی سے معیشت کو زبردست فروغ متوقع

آر بی آئی شرح سود میں کٹوتی سے معیشت کو زبردست فروغ متوقع

نئی دہلی 4 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آر بی آئی کی شرحوں میں کٹوتی سے مستقبل قریب میں معیشت کو زبردست فروغ حاصل ہونے کی توقع ظاہر کرتے ہوئے مملکتی وزیر فینانس جینت سنہا نے آج کہاکہ اس فیصلہ سے قرض پر ادا کی جانے والی ای ایم آئیز میں بھی کمی آنی چاہئے اور شرحوں کی شرائط کو بھی مزید آسان بنایا جانا چاہئے۔ آر بی آئی کی جانب سے شرح سود می

نئی دہلی 4 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آر بی آئی کی شرحوں میں کٹوتی سے مستقبل قریب میں معیشت کو زبردست فروغ حاصل ہونے کی توقع ظاہر کرتے ہوئے مملکتی وزیر فینانس جینت سنہا نے آج کہاکہ اس فیصلہ سے قرض پر ادا کی جانے والی ای ایم آئیز میں بھی کمی آنی چاہئے اور شرحوں کی شرائط کو بھی مزید آسان بنایا جانا چاہئے۔ آر بی آئی کی جانب سے شرح سود میں 0.25 فیصد کی کمی کا فیصلہ کرنے کے فوری بعد جینت سنہا نے کہاکہ شرح میں کٹوتی سے گزشتہ ہفتہ پیش کردہ مرکزی بجٹ کے لئے مزید اعتماد پیدا ہوگا اور آر بی آئی نے حکومت کی پالیسیوں پر عوام الناس کے اندر یقین پیدا کرنے میں مدد کی ہے۔ مملکتی وزیر فینانس نے کہاکہ شرح میں کٹوتی سے مختصر مدتی طور پر معیشت میں زبردست چھلانگ دیکھی جائے گی۔ آر بی آئی نے غیرمعمولی قدم اُٹھایا ہے اس کے بعد بینک شرحوں کو آسان بنانے کے لئے مزید راحت کے اقدام کرنے ہوں گے۔ اُنھوں نے کہاکہ افراط زر میں بھی کمی کی توقع ہے اور عالمی سطح پر معیشت میں آنے والی گراوٹ پر بھی قابو پایا جاسکے۔ ہم نے اس سلسلہ میں پارلیمنٹ میں کہا ہے کہ ہم ایک قابل عمل اور بہترین روڈ میاپ پیش کررہے ہیں ہمارا مقصد پیداوار کو قابل لحاظ طریقہ سے بہتر بنانا ہے۔ ہم ایسی صورتحال سے دوچار ہیں جہاں ہم توقع کرتے ہیں کہ ماہانہ اقساط کی ادائیگی کے لئے مقررہ رقم میں بھی کمی آئے گی۔

آر بی آئی نے بجٹ کے متن کو بہترین متوازن قرار دے کر تعریف کی ہے۔ ہندوستان کے تمام شہریوں کے لئے یہ خوشی کی بات ہے کہ ان کے ملک میں اب معیشت کی رفتار تیز ہوگی اور اس میں زبردست اچھال آئے گا۔ چیف اکنامک اڈوائزر اروند سبرامنیم نے بھی یہ کہا ہے کہ آر بی آئی کی جانب سے شرحوں میں کٹوتی کرنا ایک قابل مبارکباد قدم ہے۔ یہ فیصلہ معیشت کے لئے اچھا ہے۔ حکومت اور آر بی آئی کو معاشی منظر نامہ پر اپنے خیالات اور رائے کا تبادلہ کرنا چاہئے۔ ریزرو بینک آف انڈیا نے آج حیرت انگیز طور پر بینک کی شرح سود میں کٹوتی کا فیصلہ کیا ہے۔ مختصر مدتی قرض شرح کو 7.75 فیصد سے گھٹاکر 7.5 فیصد کردیا گیا ہے جس پر استقدامی اثر کے ساتھ عمل ہوگا۔ دیگر شرحوں کو بھی مناسب طور پر موزوں مقام کے لئے استعمال کیا جائے گا۔

ایل سی آئی شرحوں میں کمی کے اعلان کے فوری بعد بی ایس سی اسٹاک ایکس چینج میں شیء رمارکٹ میں زبردست اُچھال آیا ہے اور یہ 30,000 کے تاریخی نشانہ کو پالیا ہے۔ آر بی آئی کے شرح کٹوتی فیصلہ پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے ہندوستانی صنعت کاروں نے اس فیصلہ کا خیرمقدم کیا اور کہاکہ اس سے مارکٹ کو مثبت اشارے ملتے ہیں اور سرمایہ کاروں کو بھی خوشی ہوئی کہ آر بی آئی کی شرحوں میں کمی آئے گی اور معیشت کے علاوہ سرمایہ مارکٹ میں بھی زبردست اُچھال آئے گی۔ سی آئی آئی کے ڈائرکٹر جنرل چندرجیت بنرجی نے کہاکہ ترقی پر مبنی بجٹ کی پیشکشی کے بعد آر بی آئی نے یہ اچھا فیصلہ کیا ہے۔ شرح سود میں کمی یہ سنہرا مثبت اشارہ ہے کہ آر بی آئی اور حکومت دونوں ہی کی پیداوار کو فروغ دینے کے لئے کام کررہے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ سال 2015 ء میں شرح سود میں مزید 0.75 فیصد تک کمی کی توقع ہے۔ بعض بنکرس نے بھی توقع ظاہر کی ہے کہ آر بی آئی اپنے اہم پالیسی شرحوں میں مزید نرمی لائے گی۔

TOPPOPULARRECENT