Saturday , November 25 2017
Home / کھیل کی خبریں / آسٹریلیا کی دوسرے ٹسٹ میں بھی کامیابی یقینی

آسٹریلیا کی دوسرے ٹسٹ میں بھی کامیابی یقینی

نیوزی لینڈ دوسری اننگز میں 335 پر آؤٹ ۔ 201 کے ٹارگٹ پر مہمانوں کا اسکور 70/1
کرائسٹ چرچ ، 23 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیا نے جیکسن برڈ اور جیمز پٹنسن کی تباہ کن بولنگ کی بدولت نیوزی لینڈ کے خلاف دوسرے ٹسٹ میچ پر گرفت مضبوط کرتے ہوئے وائٹ واش کی راہ ہموار کر لی۔ یہاں جاری ٹسٹ میچ کے آج چوتھے روز مشکلات سے دوچار نیوزی لینڈ کی ٹیم نے 121/4 سے اپنی نامکمل دوسری اننگز دوبارہ شروع کی تو کین ولیمسن اور کوری اینڈرسن وکٹ پر موجود تھے۔ دونوں کھلاڑیوں نے ذمے دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کیا اور پانچویں وکٹ کیلئے 102 رنز کی قیمتی شراکت قائم کی۔ اس شراکت کا خاتمہ برڈ نے اینڈرسن کو بولڈ کر کے کیا جو 40 رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹے۔ تاہم نیوزی لینڈ کو سب سے بڑا دھکہ اس وقت لگا جب چار رنز کے اضافے سے برڈ نے نیوزی لینڈ کی امیدوں کا محور اور 97 رنز بنانے والے ولیمسن کی اننگز کا بھی خاتمہ کر دیا جبکہ اسی مجموعے پر ٹم ساؤدھی بھی اسکور کو زحمت دیئے بغیر پویلین لوٹے۔ اس موقع پر ایسا محسوس ہوتا تھا کہ شاید کیوی اننگز جلد اختتام پذیر ہو جائے لیکن بی جے واٹلنگ اور میٹ ہنری آسٹریلیائی بولروں کے خلاف ڈٹ گئے۔ دونوں کھلاڑیوں نے آٹھویں وکٹ کیلئے 118 رنز جوڑ کر اننگز کی سب سے بڑی شراکت قائم کی۔ واٹلنگ 46 اور ہنری 66 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ نیوزی لینڈ کی پوری ٹیم 335 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی اور آسٹریلیا کو پہلی اننگز کی برتری کی بدولت میچ جیتنے کیلئے 201 رنز کا آسان ٹارگٹ ملا۔ آسٹریلیا کی جانب سے جیکسن برڈ نے شاندار بولنگ کرتے ہوئے پانچ وکٹیں حاصل کئے جبکہ جیمز پٹنسن نے چار کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ آسٹریلیا نے 201 رنز کا تعاقب شروع کیا تو اوپنرز نے ٹیم کو 49 رنز کا مثبت آغاز فراہم کیا۔ ڈیوڈ وارنر 22 رنز بنانے کے بعد نیل ویگنر کی وکٹ بنے۔ جب چوتھے دن کے کھیل کا خاتمہ ہوا تو آسٹریلیا نے ایک وکٹ کے نقصان پر 70 رنز بنائے تھے۔ جو برنس اور عثمان خواجہ وکٹ پر موجود ہیں اور آسٹریلیا کو میچ جیتنے کیلئے محض 131 رنز درکار ہیں۔ اس میچ میں فتح پر آسٹریلیا ، نیوزی لینڈ کے خلاف اسی کی سرزمین پر کلین سویپ مکمل کر لے گا کیونکہ اس نے ویلنگٹن میں پہلا ٹسٹ جیت رکھا ہے۔ آسٹریلیا کو عالمی نمبر ایک رینکنگ بھی دوبارہ حاصل ہوجائے گی۔موجودہ طورپر ہندوستان عالمی نمبر ایک ہے لیکن 30اپریل کی آخری تاریخ سے قبل ٹیم انڈیا کو بہتر رینک کیلئے کوئی ٹسٹ میچ دستیاب نہیں رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT