Saturday , January 20 2018
Home / شہر کی خبریں / آلیر انکاؤنٹر و وقف اراضی پر احتجاجی جلسہ منسوخ

آلیر انکاؤنٹر و وقف اراضی پر احتجاجی جلسہ منسوخ

تنظیم انصاف و دکن وقف پروٹیکشن سوسائٹی کی پولیس کے رویہ پر سخت تنقید

تنظیم انصاف و دکن وقف پروٹیکشن سوسائٹی کی پولیس کے رویہ پر سخت تنقید
حیدرآباد۔14جون(سیاست نیوز) تنظیم انصاف اور دکن وقف پروٹکشن سوسائٹی کے زیر اہتمام ٹولی مسجد وقف اراضی کا تحفظ اور آلیر فرضی انکاونٹر متاثرین کے ساتھ انصاف کے عنوان پر منعقدہ احتجاجی جلسہ عام کو پولیس کی جانب سے منسوخ کئے جانے پر سینئر کمیونسٹ قائد وسابق رکن پارلیمنٹ راجیہ سبھا جناب سیدعزیز پاشاہ‘ کارگذار صدر سنی علماء بورڈ مولانا سید حامد حسین شطاری وصدر دکن وقف پروٹکشن سوسائٹی جناب عثمان بن محمد الہاجری‘ جناب سیدکریم الدین شکیل ایڈوکیٹ‘ جناب الحاج سید سلیم‘ منیر پٹیل نے پولیس کے آمرانہ رویہ کی سخت لفظوں میں مذمت کی۔ اپنے مشترکہ صحافتی بیان میں مذکورہ قائدین نے پولیس کے اقدام کو غیر منصفانہ اور غیرجمہوری قراردیتے ہوئے کہاکہ پولیس مفاد پرست سیاسی جماعتوں کے ہاتھوں کی کٹ پتلی بنی ہوئی ہے۔ جناب سید عزیز پاشاہ نے کہاکہ مذکورہ عنوان پر تنظیم انصاف اور دکن وقف پروٹکشن سوسائٹی کی جانب سے منعقد ہونے والے تین جلسوں کو پولیس نے جبراً منسوخ کرتے ہوئے جس بربریت کا مظاہرہ کیاہے اس کی ماضی میںمثال نہیںملتی۔ انہوں نے کہاکہ ٹولی مسجد وقف اراضی 27ایکڑ سے زائد اراضی کی صیانت اور بازیابی کے لئے جاری جدوجہد میںرکاوٹیںکھڑا کرتے ہوئے موقع پرست سیاسی قائدین اور لینڈ گرابرس نہ صرف ٹولی مسجد کی وقف اراضی ہڑپنے کی کوشش کررہے ہیں بلکہ ماضی میں وقف اراضیات کے ساتھ ہونے والے کھلواڑ کی پردہ پوشی میںمصروف ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اگر پولیس وقف اراضی کے تحفظ اور آلیر فرضی انکاونٹر متاثرین کے ساتھ انصاف کے مطالبے پر جلسہ منعقد کرنے کی اجازت نہیںدیتی ہے تو دیگر جماعتوں اور تنظیموں کو بھی دبیر پورہ دروازے کے قریب جلسہ کی اجازت دینے سے پولیس کا انکارلازمی ہے۔ مولانا سید حامد حسین شطاری نے وقف اراضی کی بازیابی کے متعلق تنظیم انصاف اور دکن وقف پروٹکشن سوسائٹی کے احتجاجی جلسہ کی منسوخی کو جمہوریت کا قتل قراردیا۔ انہو ں نے کہاکہ طاقت کا استعمال کرتے ہوئے حکومت اور لینڈ گرابرس وقف اراضیات کی صیانت میںجاری جدوجہد کو ہرگز نہیںروک سکتے ۔ جناب عثمان بن محمد الہاجری نے کہاکہ ہمارے جلسہ عام کی منسوخی کے لئے پولیس نے دبیر پورہ دروازے کے علاقے کو پولیس چھاونی میںتبدیل کردیا او رپرانے شہر میںایمرجنسی جیسی صورتحال پیدا کردی گئی۔ انہوں نے کہاکہ جمہوریت پسندوں کے لئے حکومت اور پولیس کا یہ اقدام نہایت بد بختانہ ہے۔ جناب عثمان الہاجری نے کہاکہ وقف اراضیات کے تحفظ کی جدوجہد اور فرضی انکاونٹر متاثرین کے ساتھ انصاف کا مطالبہ کرنا حق بات کا اظہار ہے۔

TOPPOPULARRECENT