Thursday , September 20 2018
Home / Top Stories / اٹل بہاری واجپائی اور آنجہانی مالویہ کا ’بھارت رتن ‘کیلئے انتخاب

اٹل بہاری واجپائی اور آنجہانی مالویہ کا ’بھارت رتن ‘کیلئے انتخاب

نئی دہلی ۔ 24 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی سیاست کی قدآور کرشماتی شخصیت سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی کے ساتھ آنجہانی مجاہد آزادی و ماہر تعلیم مدن موہن مالویہ کو اس سال کے بھارت رتن ایوارڈ کیلئے منتخب کیا گیا ہے۔ واجپائی کی کل 90 ویں سالگرہ اور آنجہانی مالویہ کے 153 ویں یوم پیدائش سے ایک دن قبل یہ اعلان کیا گیا ہے۔ راشٹرپتی بھون سے

نئی دہلی ۔ 24 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی سیاست کی قدآور کرشماتی شخصیت سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی کے ساتھ آنجہانی مجاہد آزادی و ماہر تعلیم مدن موہن مالویہ کو اس سال کے بھارت رتن ایوارڈ کیلئے منتخب کیا گیا ہے۔ واجپائی کی کل 90 ویں سالگرہ اور آنجہانی مالویہ کے 153 ویں یوم پیدائش سے ایک دن قبل یہ اعلان کیا گیا ہے۔ راشٹرپتی بھون سے جاری صحافتی اعلامیہ میں کہا گیا ہیکہ ’’پنڈت مدن موہن مالویہ کو (بعداز مرگ) اور اٹل بہاری واجپائی کو بھارت رتن ایوارڈ دینے پر صدرجمہوریہ کو خوشی ہوئی ہے‘‘۔ واجپائی ایک ایسی کرشماتی سیاسی شخصیت ہیں، جنہوں نے سیاسی اتفاق رائے کو فروغ دیا اور ساری سیاسی برادری نے ان کے اس نظریہ کو قبول کیا۔ واجپائی 1998ء تا 2004ء وزیراعظم کے عہدہ پر فائز رہے۔

بعدازاں پیرانہ سالی سے مربوط عارضوں کے سبب وہ سیاسی منظرعام سے اوجھل ہوگئے۔ سیاسی حلقوں میں واجپائی کو بی جے پی کا اعتدال پسند چہرہ کہا جاتا ہے اور انہیں ایک مدبر قرار دیتے ہوئے ستائش کی جاتی ہے۔ ان دونوں کو بھارت رتن کیلئے منتخب کئے جانے کے بعد ملک کا اعلیٰ ترین اعزاز حاصل کرنے والوں کی تعداد 45 تک پہنچ گئی ہے۔ گذشتہ سال کرکٹر سچن تنڈولکر اور سائنسداں سی این آر راؤ کو یہ اعزاز دیا گیا تھا۔ واجپائی نہ صرف بی جے پی کے پہلے وزیراعظم رہے ہیں بلکہ کسی غیر کانگریس جماعت کے بھی پہلے وزیراعظم بنے جنہوں نے اس عہدہ پر پانچ سالہ میعاد مکمل کی۔ وزیراعظم نریندر مودی نے صدرجمہوریہ پرنب مکرجی سے ملاقات کرتے ہوئے اس اعزاز کیلئے آنجہانی مالویہ اور واجپائی کے نام تجویز کئے تھے، جس کے بعد مزید کسی سفارش کی ضرورت نہیں تھی چنانچہ صدر ہند نے فی الفور اس بات سے اتفاق کرلیا۔ وزیراعظم نریندر مودی کے علاوہ ان کے کابینی رفقاء ارون جیٹلی، راجناتھ سنگھ، سشماسوراج، سینئر قائد ڈاکٹر مرلی منوہر جوشی نے بھی پنڈت مالویہ اور واجپائی کے بھارت رتن اعزاز کیلئے انتخاب پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔ صدارتی اعلان سے تقریباً تمام سیاسی جماعتوں نے خیرمقدم کیا ہے جن میں کانگریس، ٹی ایم سی جے ڈی (یو) وغیرہ شامل ہیں۔ مغربی بنگال کی چیف منسٹر ممتابنرجی اور جے ڈی (یو) لیڈر نتیش کمار جوماضی کی این ڈی اے حکومت میں واجپائی کابینہ میں شامل تھے دونوں نے اس اعلان کا خیرمقدم کیا ہے۔

صدر کانگریس سونیا گاندھی نے کہا ، ’’میں اٹل بہاری واجپائی اور مدن موہن مالویہ کو بھارت رتن عطا کرنے کے فیصلہ کا خیرمقدم کرتی ہوں‘‘۔ تاہم کانگریس نے خیرمقدم کرتے ہوئے یہ امید بھی ظاہر کی کہ مودی حکومت حکمرانوں کے فرائض و ذمہ داری سے متعلق راج دھرم کی پابندی کرے گی۔ اے آئی سی سی کے شعبہ نشرواشاعت کے صدرنشین اجے ماکن نے کہا کہ وہ این ڈی اے حکومت سے راج دھرن اور سیکولرازم کی راہ پر چلنے کی توقع کرتے ہیں۔ یہ واضح طور پر 2002ء کے گودھرا فسادات کے بعد بحیثیت وزیراعظم، واجپائی کی طرف سے اس وقت کے چیف منسٹر گجرات نریندر مودی کو دیئے گئے مشورہ کا حوالہ ہے، جس میں واجپائی نے مودی کو راج دھرم کی پابندی کرنے کی نصیحت کی تھی۔ بھارت رتن کیلئے ایک اور منتخب پنڈت مدن موہن مالویہ ایک ہمہ گیر و وضع دار شخصیت تھے جو نہ صرف بنارس ہندو یونیورسٹی کے بانی تھے بلکہ جدوجہد آزادی میں اعتدال پسند اور انتہاء پسند گروپوں کے مابین خلاء کو پُر کرنے والے مجاہد بھی تھے۔ یہ بھی حسن اتفاق ہیکہ 25 ڈسمبر کو واجپائی کی 90 ویں سالگرہ اور آنجہانی مالویہ کا 153 واں یوم پیدائش بھی ہے۔

کولکتہ ۔ 24 ۔ دسمبر : ( سیاست ڈاٹ کام ) : چیف منسٹر مغربی بنگال ممتام بنرجی نے آج سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کو بھارت رتن ایوارڈ پیش کرنے مرکزی حکومت کے فیصلہ کا خیر مقدم کیا ہے ۔ ممتا بنرجی جو کہ اٹل بہاری واجپائی کابینہ میں شامل تھیں ۔ مرکزی حکومت کے فیصلہ پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ہم سب واجپائی سے محبت اور احترام کرتے ہیں اور مرکز کا یہ فیصلہ قابل ستائش ہے ۔ صدر جمہوریہ نے آج پنڈت مدن موہن مالویہ ( پس از مرگ ) اور اٹل بہاری واجپائی کو بھارت رتن ایوارڈ دینے کا اعلان کیا ہے ۔ دریں اثناء چیف منسٹر بہار جتن رام مانجھی نے آج سابق وزیر اعظم واجپائی کو بھارت رتن ایوارڈ عطا کرنے کے فیصلہ کا خیرمقدم کیا ہے اور کہا کہ یہ ایوارڈ تو انہیں بہت پہلے ہی دیا جانا چاہئے تھا چونکہ واجپائی جی ایک بلند قامت شخصیت ہیں اور بھارت رتن کے مستحق ہیں ۔ چیف منسٹر نے ایک پیام میں واجپائی کو ان کی 90 ویں سالگرہ کے موقع پر مبارکباد پیش کی ہے ۔

راج گوپال چاری سے اٹل بہاری واجپائی تک
بھارت رتن ایوارڈ یافتگان کی فہرست
نئی دہلی ۔ 24 ۔ ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ماہر تعلیم مدن موہن مالویو اور سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی بالترتیب 44 ویں اور 45 ویں ممتاز شخصیتیں ہیں جنہیں ملک کا باوقار شہری ایوارڈ بھارت رتن پیش کیا جائے گا ۔ جاریہ سال کے اوائل میں یہ ایوارڈ کرکٹر سچن ٹنڈولکر اور سائنسدان CNR راؤ کو دیا گیا تھا ۔ مابعد آزادی بھارت رتن ایوارڈ حاصل کرنے والی ممتاز شخصیتیں اس طرح ہیں ۔ سی راج گوپال چاری 1954 ، سروے پلی رادھا کرشنن 1954 ، سی وی رمن 1954 ، بھگوان داس 1955 ، مکشاگنڈم ویشویشوریا 1955 ، جواہر لال نہرو 1955 ، گویند ولبھ پنت 1957 ، دھنڈو کیشو کروے 1952 ، بدھاما چندرا رائے 1961 ء پرشوتم داس ٹنڈن 1961 ، راجندر پرساد 1962 ، ذاکر حسین 1963 ، پانڈو رنگ وامن کانے 1963 ، لال بہادر شاستری 1966 ، اندرا گاندھی 1971 ، وی وی گیری 1975 ، کے کامراج 1967 ، مدر ٹریسا 1980 ، آچاریہ ونوبا بھاوے 1983 ، خان عبداللہ غفار خاں 1987 ، ایم جی رامچندرن 1988 ، بی آر امبیڈکر 1990 ، نیلسن منڈیلا 1991 ، راجیو گاندھی 1991 ، ولبھ بھائی پٹیل 1991 ، مرارجی دیسائی 1991 ، مولانا ابولکلام آزاد 1992 ، JRD ٹاٹا 1992 ، ستیہ جیت رائے 1992 ، گلزار لال نندا 1997 ، ارونا آصف علی 1997 ، اے پی جے عبدالکلام 1997 ، ایم ایس سبیا لکشمی 1998 ، چدمبرم سبرامنیم 1998 ، جئے پرکاش نارائن 1999 ، امریتا سین 1999 ، گوپی ناتھ برڈولو 1999 ، استاد بسم اللہ خاں 2001 ، بھیم سین جوشی 2009 ، سی این آر راؤ 2014 ، سچن تنڈولکر 2014 ۔

TOPPOPULARRECENT