Saturday , September 22 2018
Home / Top Stories / اٹھانوے سالہ ماں ، 80 سالہ ضعیف بیٹے کی خدمت میں مصروف

اٹھانوے سالہ ماں ، 80 سالہ ضعیف بیٹے کی خدمت میں مصروف

 

ماں تو ماں ہوتی ہے
ماں تو ماں ہوتی ہے بیٹے یا بیٹیاں شیر خوار ہوں یا جوان ادھیڑ عمر کے ہوں یا بوڑھے ماں کے لئے وہ ہر حال میں بچے ہوتے ہیں اور وہ اپنے بچوں کی خوشیوں ان کے آرام و آسائش کے لئے اپنی خوشیاں اور چین و آرام قربان کردیتی ہے۔ اپنے بچوں کی خدمت اور انہیں راحت پہنچانے کے دوران اس کے چہرہ پر ناگواری کے معمولی آثار بھی ظاہر نہیں ہوتے بلکہ ماں کی مسکراہٹ اولاد کے لئے راحت کا کام کرتی ہے۔ ان کے سکون ذہن و قلب کا باعث بنتی ہے۔ اپنے بچوں کے لئے ماں بڑی سے بڑی مصیبت اور آفت کو بھی گلے سے لگالیتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ماں انسانوں کے لئے خالق کائنات کا بہترین تحفہ ہے۔ آج بھی دنیا میں ایسی مائیں موجود ہیں جن کے بچے 80، 90 سال کی عمر کو پہنچ چکے ہیں لیکن مائیں اپنے ضعیف اولاد کی خدمت میں کوئی کسر باقی نہیں رکھتی۔ ایسی ہی ایک ماں اڈاکیٹنگ ہیں برطانیہ کے لیورپل کی رہنے والی یہ ضعیف العمر خاتون چار بچوں کی ماں ہے اور وہ حال ہی میں ہیوئن کے ایک خصوصی نگہداشت گھر برائے معمرین میں منتقل ہوئی ہیں۔ ان کی یہ منتقلی اپنی نگہداشت صحت کو یقینی بنانے کے لئے نہیں بلکہ اپنے 80 سالہ بیٹے ٹام کی دیکھ بھال و نگہداشت کے لئے ہوئی ہے۔ ٹام کیٹنگ 2016ء میں ماس ویو ریٹائرمنٹ ہوم کے مکین بنے کیونکہ یہ یقین ہوگیا تھا کہ اب ان میں اپنے آپ کی دیکھ بھال کرنے اور سنبھالنے کی صلاحیت باقی نہیں رہی۔ تقریباً ایک سال بعد ان کی ماں 98 سالہ اڈاکیٹنگ بھی اپنے بیٹے کی خدمت کے لئے ریٹائرمنٹ ہوم پہنچ گئی کیونکہ ٹام کو بیت المعمرین میں اضافی مدد کی ضرورت تھی۔ ماں بیٹے کی محبت کی کہانی میں سب سے اہم حصہ یہ ہے کہ اپنی ماں کی خاطر ٹام نے شادی نہیں کی اور ہمیشہ اس کے ساتھ رہا۔ ریٹائرمنٹ سے قبل ٹام ہی رسم بلڈنگ سرویس میں ایک پینٹر اور ڈیکوریٹر کی حیثیت سے خدمات انجام دیا کرتا تھا جبکہ اڈا سابق مل روڈ اسپتال میں آکسیلری نرس کے طور پر کام کیا کرتی تھی۔ دونوں ماں بیٹا زندگی بھر اپنے آبائی مکان میں ساتھ رہے اور اب بیت المعمرین میں بھی ساتھ ہیں۔ اڈا کہتی ہے کہ صبح و شام وہ اپنے بیٹے کی خدمت کرتی ہے اگر وہ باہر جاتی ہیں تو ان کا بیٹا بے چینی سے ان کا انتظار کرتا رہتا ہے۔ ٹام بھی اپنی ماں کی تعریف کرتے نہیں تھکتا۔ وہ کہتا ہے کہ ماں عمر کے اس حصہ میں بھی اس کا بہت خیال رکھتی ہے اور بعض مرتبہ غصہ بھی کردیتی ہے۔ اڈا کی پوتی اور دیگر ارکان خاندان ان دونوں سے ملاقات کے لئے آتے رہتے ہیں۔ کیرہوم کے منیجر فلپ کے مطابق وہ ان ضعیف العمر ماں بیٹے کی محبت دیکھ کر بہت متاثر ہیں۔

TOPPOPULARRECENT