Sunday , September 23 2018
Home / اضلاع کی خبریں / اپریل 26کو حیدرآباد کرناٹک احتجاجی کمیٹی کا کنوینشن

اپریل 26کو حیدرآباد کرناٹک احتجاجی کمیٹی کا کنوینشن

گلبرگہ22اپریل(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) : حیدرآبادکرناٹک احتجاجی کمیٹی جناسنگرام پریشدکے اشتراک سے رائچور میں26 اپریل کو ایک خصوصی کنوینشن منعقدکرے گی ۔ اس کنوینشن کے انعقادکا مقصد علاقہ حیدرآباد کرناٹک کے پسماندہ اضلاع ، گلبرگہ، رائچور ، بیدر ، یادگیر ، کوپل اور بلاری کی ترقی کیلئے دستور ہندکی ترمیم شدہ دفعہ 371Jکے موثرنفاذ پر زور دین

گلبرگہ22اپریل(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) : حیدرآبادکرناٹک احتجاجی کمیٹی جناسنگرام پریشدکے اشتراک سے رائچور میں26 اپریل کو ایک خصوصی کنوینشن منعقدکرے گی ۔ اس کنوینشن کے انعقادکا مقصد علاقہ حیدرآباد کرناٹک کے پسماندہ اضلاع ، گلبرگہ، رائچور ، بیدر ، یادگیر ، کوپل اور بلاری کی ترقی کیلئے دستور ہندکی ترمیم شدہ دفعہ 371Jکے موثرنفاذ پر زور دینا ہے ۔ واضح رہے کہ یہ دستوری ترمیم سابق یو پی اے حکومت نے اپنے دور اقتدار میںمنظور کروائی تھی۔ لیکن اس علاقہ ترقی کیلئے اس دستوری دفعہ کو موثر انداز میںموثر انداز میں نافذ کرنے کے معاملہ میں حکومت ناکام ہوچکی ہے۔ یہ الزام عائدکرتے ہوئے جناسنگرام پریشد کے کارگزار در راگھویندرکشٹگی نے رائچور میں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ریاستی حکومت نے پارلیمینٹ کی منظورکردہ اس ترمیمی دفعہ کومکمل طور پر نظر انداز کردیا ہے۔ریاستی حکومت اس معاملہ میں مرکزکو توجہ دلانے میں بھی ناکام ہے۔ لہذا اس ضمن میں ریاستی حکومت اورمرکزی حکومت پر دباؤ ڈالنے کے لئے کنوینشن منعقد کیاجارہا ہے ۔ اس کنوینش کے لئے کنڑا تنظیموں اور دیگر ریاستی تنظیموںکی تائیڈ حاصل رہے گی ۔ انھوں نے کہاکہ کرناٹک کے اقلیتی تعلیمی اداروں نے دستورہندکی ترمیمی دفعہ 371Jمیں خودکوشامل نہ کرنے پرعدالت سے حکم التواء حاصل کرلیا ہے ۔ حکومت نے اس حکم التواء کو رکوانے کے لئے ختم کروانے کیلئے کوئی کارروائی نہیںکی ہے۔ انھوں نے کہاکہ کرناٹک اسمبلی اور سیکریٹریٹ میں 3000 سے زیادہ سرکاری ملازمین ہیں لیکن ان میں سے صرف 60 ملازمین کا تعلق علاقہ حیدر آباد کرناٹک کے اضلاع سے ہے۔ مسٹرکشٹگی نے کہاکہ علاقہ حیدر آباد کرناٹک کے خصوصی موقف سے لاپرواہی برت کر حکومت بالراست طور پر علیحدہ ریاست کے قیام کے مطالبہ کی ہمت افزائی کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT