Saturday , June 23 2018
Home / شہر کی خبریں / اپوزیشن جماعتوں کو حکومت پر تنقید کے بجائے تعمیری تجاویز پیش کرنے کا مشورہ

اپوزیشن جماعتوں کو حکومت پر تنقید کے بجائے تعمیری تجاویز پیش کرنے کا مشورہ

تلنگانہ قانون ساز اسمبلی کا عنقریب اجلاس:وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ

تلنگانہ قانون ساز اسمبلی کا عنقریب اجلاس:وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ

حیدرآباد۔/19اکٹوبر، ( سیاست نیوز) وزیرآبپاشی ٹی ہریش راؤ نے کہا کہ تلنگانہ قانون ساز اسمبلی کے بجٹ اجلاس کا بہت جلد آغاز ہوگا جس میں بجٹ کی پیشکشی کے علاوہ ریاست کو درپیش اہم مسائل پر مباحث ہوں گے۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے ہریش راؤ نے کہا کہ بجٹ اجلاس کی تاریخوں کا جلد ہی اعلان کیا جائے گا۔ انہوں نے اپوزیشن جماعتوں کے ان الزامات کو مسترد کردیا کہ حکومت اسمبلی اجلاس سے فرار اختیار کررہی ہے اور آرڈیننس کے ذریعہ مابقی چار ماہ کے بجٹ کی منظوری کی خواہاں ہے۔ہریش راؤ نے کہا کہ حکومت بجٹ اجلاس میں ہی تلنگانہ کے بجٹ کو منظوری دے گی۔انہوں نے اپوزیشن جماعتوں کو مشورہ دیا کہ وہ حکومت پر بیجا تنقیدوں کے بجائے تعمیری تجاویز پیش کریں۔انہوں نے کانگریس اور تلگودیشم پر تعمیری اپوزیشن کا رول ادا کرنے میں ناکامی کا الزام عائد کیا۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ کے بی جے پی قائدین مختلف مسائل پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بنارہے ہیں، انہیں چاہیئے کہ ریاست کی ہر ممکنہ مدد کیلئے وزیر اعظم نریندر مودی پر دباؤ بنائیں۔ انہوں نے کہاکہ برقی شعبہ میں تلنگانہ کی حصہ داری اور ملازمین کی تقسیم کے سلسلہ میں مرکز کی جانب سے جو تاخیر ہورہی ہے اس کیلئے بی جے پی قائدین کو نریندر مودی سے نمائندگی کرنی چاہیئے۔ انہوں نے بتایا کہ آل انڈیا سرویسس کے عہدیداروں کے الاٹمنٹ میں تاخیر کے سبب حکومت کے کام کاج میں دشواری پیش آرہی ہے۔ انہوں نے مرکز سے مطالبہ کیا کہ وہ آل انڈیا سرویسس کے عہدیداروں کے الاٹمنٹ کا عمل جلد مکمل کریں۔ اسی دوران ہریش راؤ نے پولی چنتلہ پراجکٹ کی تعمیر کے سلسلہ میں اراضی کے حصول کے مسئلہ پر اجلاس منعقد کیا۔ انہوں نے آندھرا پردیش کے متعلقہ وزیر اور عہدیداروں سے بھی مشاورت کی۔ انہوں نے کہا کہ اراضی کے حصول کے سلسلہ میں آندھرا پردیش حکومت کو 130کروڑ روپئے ادا کرنے چاہیئے۔ آندھرا پردیش کے وزیر آبپاشی ڈی اوما سے انہوں نے اس سلسلہ میں بات چیت کی۔ آندھرا پردیش حکومت نے اراضی کے حصول کے معاوضہ کے طور پر 40کروڑ روپئے فوری طور پر جاری کرنے سے اتفاق کیا۔انہوں نے کہا کہ ناگر جنا ساگر میں موجود کوارٹرس کو ہراج کے ذریعہ فروخت کیا جائے گا۔ ہریش راؤ نے کہا کہ تلنگانہ میں چھوٹے تالابوں اور جھیلوں کے تحفظ کیلئے حکومت نے باقاعدہ مہم کا آغاز کیا ہے جس کا مقصد آبپاشی کیلئے پانی کی ضرورت کی تکمیل کرنا ہے۔ ہریش راؤ کے مطابق پولی چنتلہ پراجکٹ کے سبب نلگنڈہ ضلع کے 13گاؤں زیر آب آچکے ہیں۔ وہاں کے عوام کو مناسب معاوضہ کی ادائیگی کیلئے تلنگانہ حکومت اقدامات کررہی ہے۔

TOPPOPULARRECENT