Saturday , November 18 2017
Home / Top Stories / اپوزیشن جماعتیں انسداد کرپشن کی مخالف ‘ مودی

اپوزیشن جماعتیں انسداد کرپشن کی مخالف ‘ مودی

نئی دہلی 16 ڈسمبر ( پی ٹی آئی ) وزیر اعظم نریندر مودی نے پارلیمنٹ تعطل پر آج اپوزیشن کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ ماضی میں اپوزیشن جماعتوں نے اسکام کے خلاف ایوان کی کارروائی کو روکا تھا اس بار اپوزیشن جماعتیں کانگریس کی قیادت میں کالے دھن اور کرپشن کو روکنے حکومت کے اقدامات کے خلاف ایوان کی کارروائی کو روک رہی ہیں۔ نریندر مودی نے یہ ریمارک بی جے پی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں کئے جبکہ آج پارلیمنٹ سرمائی اجلاس کا آخری دن تھا ۔ نوٹ بندی کے مسئلہ پر ہنگاموں کی وجہ سے پارلیمنٹ کاسارا سشن کسی کام کاج کے بغیر ختم ہوگیا ۔ کانگریس کو نشانہ بناتے ہوئے وزیر اعظم نے الزام عائد کیا کہ پارٹی نے ہمیشہ اپنے مفاد کو ملک کے مفاد پر ترجیح دی ہے جبکہ بی جے پی کیلئے قوم کا مفاد اہمیت کا حامل ہے ۔ انہوںنے ایک بار پھر ڈیجیٹل معیشت پر زور دیا اور عوام سے اپیل کی کہ وہ ڈیجیٹل معیشت کو نئے طرز زندگی کے طور پر اختیار کرلیں تاکہ سماج کو کرپشن اور کالے دھن سے پاک کیا جاسکے ۔ سابق وزیر اعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ پر بھی تنقید کرتے ہوئے مودی نے کہا کہ وہ کرپشن اور کالے دھن کے خلاف سخت اقدامات کی وکالت ضرور کرتے ہیں لیکن انہوں نے اپنے 10 سالہ دور اقتدار میں کچھ بھی نہیں کیا ۔ انہوں نے سابق کمیونسٹ لیڈر ہر کشن سنگھ سرجیت کا تذکرہ کیا اور کہا کہ اگر وہ زندہ ہوتے تو ان کے اقدام کی تائید کرتے ۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں برسر اقتدار جماعت خاص طور پر کانگریس کئی اسکامس کرتی رہی ہے اور اپوزیشن جماعتیں متحد ہو کر دیانتداری کے اصول پر جدوجہد کرتی تھیں لیکن اس بار برسراقتدار فریق این ڈی اے نے کالے دھن اور کرپشن کے خلاف مہم شروع کی ہے۔
اور اپوزیشن جماعتوں نے اس کے خلاف کام کرنا شروع کردیا ہے ۔مودی نے یہ بھی واضح کیا کہ 70 کی دہائی میں وانچو کمیٹی نے نوٹ بندی کی سفارش کی تھی جب اندرا گاندھی وزیراعظم تھیں۔ انہوں نے یاد دہانی کروائی کہ سینئر کمیونسٹ لیڈر جیوتر موئی باسو نے مطالبہ کیا تھا کہ ان سفارشات پر فوری عمل کیا جائے ۔ کانگریس کو کرپشن کی حلیف قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پارٹی نے بے نامی اثاثہ جات کے خلاف 1988 میں قانون سازی کی تھی لیکن اب تک اس نے اس قانون کو نوٹیفائی نہیں کیا ہے اور نہ ہی قواعد و ضوابط کو قطعیت دی گئی ہے ۔ پارٹی نے اس بات کو یقینی بنایا کہ یہ قانون عمل آوری کیلئے تیار نہ ہوجائے ۔

TOPPOPULARRECENT