Sunday , September 23 2018
Home / Top Stories / اپوزیشن پارٹیوں کے اعزاز میں سونیا گاندھی کا عشائیہ

اپوزیشن پارٹیوں کے اعزاز میں سونیا گاندھی کا عشائیہ

نئی دہلی ۔ /13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بیس اپوزیشن پارٹیوں کے قائدین نے آج رات متحد ہوکر سونیا گاندھی کے عشائیہ میں شرکت کی تاکہ سیکولر پارٹیوں کے وسیع تر اتحاد کے امکانات کا جائزہ لیا جائے تاکہ 2019 ء کے عام انتخابات میں بی جے پی کو اقتدار سے بیدخل کردیا جائے ۔ ذرائع کے بموجب این سی پی ، آر جے ڈی ، سماج وادی ، بی ایس پی ، ترنمول کانگریس ، ڈی ایم کے اور بائیں بازو کی پارٹیوں نے عشائیہ میں شرکت کی ۔ شرکت کرنے والے نامور قائدین نے شرت پوار ، رام گوپال یادو ، ستیش چندر مشرا ، عمر عبداللہ ، بابو لال مرانڈی ، ہیمنت سورین جتن رام مانجھی ، شردیادو اور اجیت سنگھ شامل تھے ۔ آر جے ڈی کی نمائندگی صدر پارٹی لالو پرساد کے دو بچوں نے کی ۔ ڈپٹی چیف منسٹر تیجسوی یادو اور راجیہ سبھا ایم پی میسابھارتی ان میں شامل تھے ۔ دیگر قائدین میں سدیپ بنڈو اپادھیائے ، ڈی راجہ ، محمد سلیم ، کنی موڑی ، بدرالدین اجمل اور کوپیندر ریڈی شامل تھے ۔ سونیا گاندھی ، راہول گاندھی ، منموہن سنگھ ، غلام نبی آزاد ، ملکارجن کھرگے ، احمد پٹیل ، اے کے انٹونی ، رندیپ سرجے والا کانگریس قائدین بھی عشائی میں ضروری تھے ۔ این ڈی اے کے تکڑے ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے اپوزیشن پارٹیوں نے اتحاد کی اپیل کی اور ٹی ڈی پی کے مودی حکومت سے ترک تعلق کا تذکرہ بھی کیا ۔ قبل ازیں سونیا گاندھی نے اپوزیشن اتحاد پر زور دیا اور کہا کہ علاقائی پارٹیوں کو چاہئیے کہ اپنے چھوٹے موٹے اختلافات بالائے طاق رکھ دیں اور متحد ہوکر بی جے پی کو اقتدار سے بیدخل کرنے کیلئے جدوجہد کریں ۔ بائیں بازو اور ترنمول کانگریس قائدین نے جو عشائیہ میں شریک تھے کہا کہ اس عشائیہ اور سیاسی مذاکرات کے مثبت اثرات مرتب ہوں گے ۔ بائیں بازو کے قائد نے کہا کہ یہ ایک سیاسی عشائیہ تھا ۔ تاہم کوئی سیاسی بات چیت نہیں کی گئی ۔ غیر بی جے پی پارٹیوں کو اپنی طاقت کے مظاہرے کا موقع ملا ۔

TOPPOPULARRECENT