Tuesday , July 17 2018
Home / Top Stories / اپوزیشن پر مایوسی ، الجھن اور جھوٹ پھیلانے وزیراعظم کا الزام

اپوزیشن پر مایوسی ، الجھن اور جھوٹ پھیلانے وزیراعظم کا الزام

کانگریس صرف ایک ہی خاندان کی مدح سرائی میں مصروف، مدھیہ پردیش میں موہن پورہ آبپاشی پراجیکٹ کا افتتاح ، جلسہ عام سے خطاب
راج گڑھ۔ 23 جون (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے کانگریس پر بہم اور بالواسطہ تنقید کرتے ہوئے آج کہا کہ وہ جھوٹ، الجھن اور مایوسی پھیلا رہی ہے، اس کے برخلاف ان کی حکومت، عوام کی فلاح و بہبود کیلئے کام کررہی ہے۔ مودی نے مدھیہ پردیش کے ضلع راج گڑھ میں موہن پورہ آبپاشی پراجیکٹ کا افتتاح کرنے کے بعد جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’عوام بی جے پی اور اس کی حکومت پر بھروسہ کرتے ہیں اور جو الجھن، مایوسی اور جھوٹ پھیلا رہے ہیں۔ وہ زمینی حقائق سے الگ تھلگ ہیں‘‘۔ وزیراعظم نے جن سنگھ کے بانی شیام پرساد مکرجی کو خراج عقیدت ادا کیا اور کہا کہ ان کا نظریہ تعلیم، صحت، فینانس اور سکیورٹی کو مستحکم بنانا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ’’ان (مکرجی) کا نظریہ نوجوانوں کو ہنرمند بنانا اور مواقع فراہم کرنا تھا تاکہ وہ ملک کی خدمت کے قابل بن سکیں۔ اسٹارٹ اَپ اور میک ان انڈیا جیسے پروگراموں سے ان کے نظریات کی جھلک ملتی ہے‘‘۔ انہوں نے مزید کہا کہ ’’ایک ہی خاندان کی مدح سرائی کرنا بدبختی ہے۔ ملک کی قدآور شخصیات کی اہمیت گھٹانے کی دانستہ کوششیں کی جارہی ہںی۔ کانگریس کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے مودی نے کہا کہ اس پارٹی نے ملک پر کئی سال حکمرانی کی ہے لیکن اس نے عوام اور ان کی سخت محنت پر کبھی بھروسہ نہیں کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ ’’انہوں (کانگریس) نے ملک کی طاقت و استحکام پرکبھی بھروسہ نہیں کیا۔ گزشتہ چار سال کے دوران ہم نے کبھی بھی نااُمیدی یا مایوسی کی بات نہیں کی۔ ہم وہ ہیں جو بھروسے کے ساتھ آگے بڑھ رہے ہیں‘‘ ۔ مودی نے کہا کہ بی جے پی نے مرکز چار سال اور مدھیہ پردیش میں 13 سال کے دوران کسانوں، غریبوں اور سماج کے دیگر محروم طبقات کو اوپر اُٹھانے کیلئے کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کی حکمرانی کے دوران مدھیہ پردیش کو ’’بیمار ریاست‘‘ کہا جاتا تھا۔ مودی نے کہا کہ ’’کانگریس نے کبھی یہ محسوس نہیں کیا تھا کہ اس سے ریاست کے عوام کی توہین ہوئی ہے۔ تاہم بی جے پی نے (بیمار ریاست) کا نام ہٹانے کیلئے سخت محنت کی۔ قبل ازیں وزیراعظم مودی نے موہن پورہ آبپاشی پراجیکٹ کا افتتاح کیا۔ 3,866 کروڑ روپئے کی لاگت سے تعمیر کردہ پراجیکٹ میں ایک ڈیم اور ایک نہر شامل ہیں جو ریاست کے 727 دیہات کو سیراب کریں گے۔ وزیراعظم نے اس پراجیکٹ کی تکمیل پر مزدوروں کو مبارکباد دی جنہوں نے رات دن ایک کرکے اپنی پسند کی محنت سے اس پراجیکٹ کو مکمل کیا۔ وہ صرف ایک رسمی طور پر بٹن دباکر اس پراجیکٹ کا آغاز کررہے ہیں۔ اس پراجیکٹ کی بدولت 700 دیہات کے راست طور پر مستفید ہوں گے اور 1.25 لاکھ ہیکٹر اراضی پر آبپاشی اور 400 دیہات کو پانی کی سہولت میسر ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT