Thursday , December 14 2017
Home / Top Stories / اپوزیشن کی رکاوٹوں کے باوجود آبپاشی پراجیکٹس کو مکمل کیا جائیگا

اپوزیشن کی رکاوٹوں کے باوجود آبپاشی پراجیکٹس کو مکمل کیا جائیگا

سری رام ساگر پراجیکٹ کاموں کا دوبارہ آغاز ۔ 45 لاکھ ایکڑ اراضی کو سیراب کیا جائیگا ۔ چیف منسٹر کے سی آر کا خطاب
نظام آباد ۔10 اگست ( سیاست نیوز ) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اعلان کیا کہ سری رام ساگر پراجیکٹ کو دوبارہ کارآمد بناتے ہوئے جہاں 40 تا 45 لاکھ ایکر اراضی سیراب کیا جاسکے گا بلکہ اس کے نتیجہ میں لاکھوں عوام کی پینے کے پانی کی ضروریات کی تکمیل بھی ہوسکتی ہے ۔ چندر شیکھر راؤ سری رام ساگر پراجیکٹ کے کاموں کا ری ڈیزائننگ کے ساتھ آغاز کرنے کے بعد ایک جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ اس پراجیکٹ کو آئندہ سال جون تک 90 ٹی ایم سی پانی دستیاب ہوگا اور اس کے نتیجہ میں نہ صرف 45 لاکھ ایکڑ تک اراضیات کو سیراب کیا جاسکے گا بلکہ اس کے نتیجہ میں چھ اضلاع کی پینے کے پانی کی ضروریات کی تکمیل بھی ہوگی ۔ چیف منسٹر نے اپنے خطاب کے دوران عوام سے کہا کہ وہ اپوزیشن جماعتوں سے سوال کریں کہ وہ ایک منظم انداز میں کیوں آبپاشی پراجیکٹس کی راہ میں رکاوٹیں پیدا کر رہی ہیں۔ چیف منسٹر نے کانگریس پر خاص طور پر تنقید کی اور کہا کہ اس نے کالیشورم پراجیکٹ کے خلاف جملہ 96 مقدمات دائر کئے ہیںاور عوام کو چاہئے کہ کانگریس کو سبق سکھائیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ خود کو خوش قسمت سمجھتے ہیں کہ انہوں نے سری رام ساگر پراجیکٹ کو دوبارہ شروع کیا ہے ۔ یہ پراجیکٹ یہ حقیقت ہے کہ دو سابق وزرائے اعظم پنڈت جواہر لال نہرو اور اندرا گاندھی نے پہلے اور دوسرے مرحلہ کا سنگ بنیاد رکھا تھا ۔ اس کے باوجود یہ پراجیکٹ تعطل کا شکار رہا ۔ تیسرے مرحلہ کے آغاز کا تو سوال ہی نہیں تھا تاہم وہ خود کو خوش قسمت سمجھتے ہیں کہ انہوں نے اس کام کا دوبارہ آغاز کیا ہے ۔ چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ انہوں نے 1996 میں کہا تھا کہ آندھرائی حکمرانوں نے تلنگانہ کو پراجیکٹس سے محروم کردیا ہے اور انہوں نے تلنگانہ میں فصلوں کیلئے پانی تک سربراہ نہیں کیا ہے ۔ اب وہ ایک چیف منسٹر کی حیثیت سے اس پراجیکٹ کا دوبارہ آغاز کر رہے ہیں۔ چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ گوداوری کے 200 کیلومیٹر کی پٹی میں اس پراجیکٹ کی تکمیل سے یہاں ہمیشہ پانی دستیاب رہے گا ۔ چیف منسٹر نے کہا کہ اس پراجیکٹ کو مکمل کرنے کیلئے حکومت کی جانب سے مناسب فنڈز جاری کئے جائیں گے تاکہ سنڈیلہ ‘ میڈی گڈہ اور انارم وغیرہ میں بیاریجس بھی مکمل کئے جائیں گے تاکہ اس پراجیکٹ کو 90 ٹی ایم سی پانی سے پر کیا جاسکے ۔ اب اس میں صرف آٹھ ٹی ایم سی پانی کی گنجائش کی وجہ سے اس علاقہ میں فصلوںکو بھی پانی دستیاب نہیں ہو رہا ہے ۔ اس کے باوجود 250 ٹی ایم سی پانی سمندر میں ضائع کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہم ان بیاریجس کو بروقت پورا کرنے میں کامیاب ہوجاتے ہیں تو سری رام ساگر پراجیکٹ میں پانی کی دستیابی کو یقینی بنایا جاسکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اس پراجیکٹ کی تکمیل کے بعد کسانوں کو اپنی اراضیات سیراب کرنے کیلئے بارش کا انتظار کرنا نہیں پڑیگا ۔ اس پراجیکٹ کے تحت آنے والے سارے علاقہ کو ایک سیاحتی مقام کے طور پر ترقی دی جائیگی اور یہاں فلموں کی شوٹنگس کی بھی حوصلہ افزائی کی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے 4,600 ایکڑ کے برخلاف 4,500 ایکڑ اراضیات کونڈا پوچما پراجیکٹ کیلئے حاصل کرلی ہیں حالانکہ کانگریس کے مقامی قائدین نے اس کے خلاف عدالتوں میں درخواستیں داخل کی ہیں کیونکہ ان پراجیکٹس کی تکمیل کے نتیجہ میں یہ قائدین بیروزگار ہوجائیں گے اور ان کا کوئی مستقبل نہیں رہے گا ۔ چندر شیکھر راؤ نے اعلان کیا کہ وہ اپوزیشن کی رکاوٹوں کے باوجود آبپاشی پراجیکٹس کو پورا کرینگے اور اس پراجیکٹ کی تکمیل کے بعد شمالی تلنگانہ علاقہ میں پانی کی کوئی قلت نہیں ہوگی کیونکہ اس علاقہ کو مسلسل حکومتوں نے نظر انداز کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس پراجیکٹ کی تکمیل کے بعد عادل آباد ‘ کریمنگر ‘ نظام آباد ‘ کامار یڈی ‘ نلگنڈہ اور دوسرے اضلاع کو بھی پانی حاصل ہوگا ۔ وزیر انڈومنٹ اندرا کرن ریڈی ، وزیر زراعت پوچارام سرینواس ریڈی نے بھی مخاطب کیا ۔ جلسہ کی کارروائی رکن اسمبلی بالکنڈہ پرشانت ریڈی نے چلائی ۔ جلسہ میں ڈپٹی چیف منسٹر س محمد محمود علی ، کڈیم سری ہری ، وزراء این نرسمہا ریڈی ، ایٹالہ راجندر، سرینواس یادو، مہندر ریڈی ، پدما رائو ، جوگورامنا کے علاوہ اراکین پارلیمنٹ کے کویتا ( نظام آباد ) ، ڈی سرینواس رکن راجیہ سبھا، ونود کمار کریم نگر، سمن ( پدا پلی) ،بی بی پاٹل، اراکین اسمبلی باجی ریڈی گوردھن ، گنیش گپتا، شکیل عامر ، گمپا گوردھن ، رویندرریڈی ، جیون ریڈی ، ہنمنت شنڈے کے علاوہ ایم ایل سیز، راجیشور، وی جی گوڑ، ریڈ کو چیرمین ایس اے علیم ، اقلیتی سیل صدر ایم کے مجیب الدین ، وینو گوپا ل چاری کے علاوہ دیگر بھی موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT