Sunday , December 17 2017
Home / Top Stories / اپوزیشن کے تعاون سے بلوں کی منظوری کیلئے پارلیمنٹ کا خصوصی سیشن متوقع

اپوزیشن کے تعاون سے بلوں کی منظوری کیلئے پارلیمنٹ کا خصوصی سیشن متوقع

معیشت کے استحکام کیلئے این ڈی اے حکومت اپنی کارکردگی کو بہتر بنانے کوشاں، مرکزی وزیر وینکیا نائیڈو کا بیان

پٹنہ ۔ 28 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ملک کی معاشی پیداوار میں بہتری کیلئے اصلاحات کے اقدامات کرنے پر زور دیتے ہوئے مرکز نے آج کہا کہ وہ اپوزیشن کے تعاون سے جی ایس ٹی اور دیگر بلوں کی منظوری کی خاطر آئندہ ماہ پارلیمنٹ کا خصوصی سیشن طلب کرسکتی ہے۔ وزیرپارلیمانی امور ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ یہ نہایت ہی ضروری ہیکہ جی ایس ٹی بل جیسے اصلاحات کے اقدامات کئے جائیں۔ حصول اراضی ترمیمی بل ٹیکس سے متعلق دیگر بلوں کے علاوہ قانون بیع و شرع ترمیمی بل کی منظوری ضروری ہے۔ آئندہ ماہ پارلیمنٹ کے بجٹ سیشن کی طلبی سے ہی معاشی اسحتکام اور پیداوار کو یقینی بنایا جاسکتا ہے۔ انہوں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ سیشن کی طلبی کے امکان کو مسترد کردیا۔ اہم بلوں کی منظوری کے لئے مشترکہ سیشن کی جانب توجہ دلائی گئی تھی۔ ان میں سے کئی بلوں کو ترمیم کے ساتھ منظور کرانا ہے۔

دونوں ایوانوں کو علحدہ علحدہ طور پر یہ بل منظور کرنے ہوں گے۔ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ این ڈی اے حکومت نے اپنی جانب سے ہر ممکنہ کوشش کی ہے۔ اپوزیشن نے بعض بلوں کی مخالفت کرتے ہوئے پارلیمنٹ میں انہیں منظور ہونے نہیں دیا۔ ان کے اعتراضات کا جائزہ لینے کیلئے سلیکٹ کمیٹی سے رجوع کیا گیا ہے۔ وینکیا نائیڈو نے کہا کہ اب اپوزیشن کی ذمہ داری ہیکہ وہ حکومت سے تعاون کرتے ہوئے بلوں کی منظوری کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے خاص کر کانگریس اور اس کی حلیف پارٹیوں پر زور دیا کہ وہ بلوں کی منظوری کے لئے حکومت کا ساتھ دیں۔ انہوں نے احساس ظاہر کیا کہ این ڈی اے حکومت نے معاشی بہتری کیلئے اچھے کام کئے ہیں۔ مالیہ ریونیو اور کرنٹ اکاونٹ کے علاوہ خسارہ کو کم کرنے کیلئے بھی اقدامات کئے گئے ہیں۔ مرکزی وزیر نے مزید کہا کہ مزید اصلاحاتی اقدامات ناگزیر ہیں۔

اس بات کی نشاندہی کرتے ہوئے وینکیا نائیڈو نے کہا کہ حکومت نے جی ایس ٹی کے بشمول اہم اصلاحاتی بلوں کو پارلیمنٹ میں منظور کرانے کی کوشش شروع کی ہے۔ راجیہ سبھا میں بھی کام کاج کو پرسکون چلانے کیلئے زور دیا جارہا ہے۔ کانگریس اور اس کی حلیف پارٹیوں کو جی ایس ٹی کی مخالفت نہیں کرنی چاہئے۔ اسی طرح انہوں نے کہا کہ کانگریس نے جو سخت موقف اختیار کیا ہے، اس پر غور کیا جارہا ہے۔ اراضی حصول ترمیمی قانون 2013ء پر کانگریس کے علاوہ دیگر اپوزیشن پارٹیوں نے اپنے اعتراضات اٹھائے ہیں۔ 28 ریاستوں نے ان بلوں کے حق میں اپنی رائے ظاہر کی ہے۔ انفراسٹرکچر پراجکٹس کو جلد سے جلد شروع کرنے کی ضرورت ہے۔ حصول اراضی بل 2013ء میں این ڈی اے حکومت نے جو ترمیمات کی ہیں وہ حق بجانب ہیں۔

TOPPOPULARRECENT