Thursday , January 18 2018
Home / سیاسیات / اڈوانی، جوشی کو ’اولڈ ایج ہوم ‘بھیج دیا گیا، کانگریس کا ردعمل

اڈوانی، جوشی کو ’اولڈ ایج ہوم ‘بھیج دیا گیا، کانگریس کا ردعمل

نئی دہلی ۔ 26 اگست (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج بی جے پی کے اپنے بانی قائدین ایل کے اڈوانی اور مرلی منوہر جوشی کو پارلیمنٹری بورڈ سے حذف کردینے کے فیصلے پر طنز کے ساتھ نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ انہیں ’’اولڈ ایج ہوم‘‘ میں ڈال دیا گیا ہے اور ان کا ’مارگ درشک منڈل‘ صرف ’موک درشک‘ (خاموش تماشائی) رہے گا۔ پارٹی نے کہا کہ یہ تبدیلی اقتد

نئی دہلی ۔ 26 اگست (سیاست ڈاٹ کام) کانگریس نے آج بی جے پی کے اپنے بانی قائدین ایل کے اڈوانی اور مرلی منوہر جوشی کو پارلیمنٹری بورڈ سے حذف کردینے کے فیصلے پر طنز کے ساتھ نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ انہیں ’’اولڈ ایج ہوم‘‘ میں ڈال دیا گیا ہے اور ان کا ’مارگ درشک منڈل‘ صرف ’موک درشک‘ (خاموش تماشائی) رہے گا۔ پارٹی نے کہا کہ یہ تبدیلی اقتدار کو ایک ہاتھ میں مرکوز کردینے کے عمل کا نقیب ہے، جو ظاہر طور پر وزیراعظم نریندر مودی کا حوالہ ہے۔ کانگریس لیڈر رشید علوی نے بی جے پی کے نئے ادارہ مارگ درشک منڈل (رہنما کمیٹی) کا مضحکہ اڑایا، جس کی تشکیل آج کی گئی، جس میں اڈوانی اور جوشی کے علاوہ علیل سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپائی بطور ارکان شامل ہیں۔ علوی نے اخباری نمائندوں سے کہا کہ یہ موک درشک منڈل ہے۔ یہ اولڈ ایج ہوم کی مانند ہے جہاں سے اڈوانی اور جوشی بی جے پی کا کام کاج خاموش تماشائیوں کے طور پر دیکھیں گے۔ ہم سب واقف ہیںکہ انہیں حاشیہ پر کیا جارہا ہے۔ ایک اور کانگریس لیڈر و سابق وزیراطلاعات منیش تیواری نے بھی اس تبدیلی پر ردعمل میں کہا کہ یہ اقتدار کی مرکوزیت ہے۔

TOPPOPULARRECENT