Wednesday , September 19 2018
Home / سیاسیات / اڈوانی کی خواہش نظرانداز، گاندھی نگر سے دوبارہ ٹکٹ

اڈوانی کی خواہش نظرانداز، گاندھی نگر سے دوبارہ ٹکٹ

نئی دہلی ۔ 19 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج رات ایل کے اڈوانی کو گجرات میں ان کے حلقہ انتخاب گاندھی نگر سے دوبارہ نامزد کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس معاملہ میں سینئر لیڈر کی بھوپال (مدھیہ پردیش) منتقلی کی خواہش کو مسترد کردیا جس سے اڈوانی اور نریندر مودی کے مابین کشیدگی کا اظہار ہوتا ہے۔ بی جے پی وزارت عظمیٰ امیدوار نریندر مودی ودو

نئی دہلی ۔ 19 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) بی جے پی نے آج رات ایل کے اڈوانی کو گجرات میں ان کے حلقہ انتخاب گاندھی نگر سے دوبارہ نامزد کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس معاملہ میں سینئر لیڈر کی بھوپال (مدھیہ پردیش) منتقلی کی خواہش کو مسترد کردیا جس سے اڈوانی اور نریندر مودی کے مابین کشیدگی کا اظہار ہوتا ہے۔ بی جے پی وزارت عظمیٰ امیدوار نریندر مودی ودودرا (گجرات) سے بھی مقابلہ کریں گے۔ انہیں پہلے ہی اترپردیش میں وارناسی سے امیدوار نامزد کیا گیا ہے۔ آج بی جے پی سنٹرل الیکشن کمیٹی کے دن بھر جاری رہے اجلاس میں اڈوانی کے حلقہ انتخاب کے سلسلہ میں کافی مباحث ہوئے۔ 86 سالہ سینئر لیڈر نے خود کو اجلاس سے دور رکھا اور کہا کہ وہ ایسے مباحث کا حصہ نہیں بننا چاہتے جس میں ان کے حلقہ انتخاب کے سلسلہ میں بات کی جارہی ہے۔

اڈوانی نے صدر پارٹی راجناتھ سنگھ سے یہ خواہش ظاہر کی تھی کہ انہیں گاندھی نگر سے بھوپال منتقل کیا جائے۔ وہ لوک سبھا میں 5 مرتبہ گاندھی نگر کی نمائندگی کرچکے ہیں۔ سشماسوراج اور نتن گڈکری ان کے گھر گئے تاکہ گاندھی نگر سے مقابلہ کیلئے انہیں رضامند کیا جاسکے جہاں اڈوانی نے ان قائدین کے سامنے اپنی ناراضگی کا اظہار کیا ہے اور سمجھا جاتا ہیکہ انہوں نے یہ فیصلہ قبول کرنے سے انکار کردیا۔ اڈوانی کا استدلال ہیکہ اپنی پسند کے حلقہ کا انتخاب ان کا حق ہے جیسا کہ دیگر قائدین بھی ترجیحی نشستوں پر مقابلہ کی خواہش ظاہر کررہے ہیں۔

بی جے پی میں نریندر مودی کو ترقی اور وزارت عظمیٰ امیدوار بنائے جانے کے بعد سے اڈوانی کی مقبولیت کم ہوتی جارہی ہے اور گاندھی نگر سے مقابلہ نہ کرنے کی خواہش مودی کے ساتھ ان کے ناخوشگوار روابط کا اظہار کرتی ہے۔ اجلاس میں سمجھا جاتا ہیکہ مودی نے کہا کہ اڈوانی کو گاندھی نگر سے ہی دوبارہ مقابلہ کرنا چاہئے خواہ عوام میں یہ پیام کیوں نہ جائے کہ پارٹی میں سب کچھ بہتر نہیں ہے۔ بی جے پی نے آج 67 امیدواروں کی فہرست کو قطعیت دی جن میں سابق اداکارہ ہیمامالنی کو اترپردیش میں متھرا سے ٹکٹ دیا گیا ہے جبکہ اولمپک میڈلسٹ راجیہ وردھن سنگھ راتھوڑ کو جئے پور (رورل) سے ٹکٹ دیا گیا ہے۔ اس دوران بی جے پی وزارت عظمیٰ امیدوار نریندر مودی نے آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت سے ملاقات کی جس میں سمجھا جاتا ہیکہ گاندھی نگر سے اڈوانی کو ٹکٹ کے بشمول دیگر کئی موضوعات پر بات چیت ہوئی۔ بی جے پی سنٹرل الیکشن کمیٹی نے جیسے ہی امیدواروں کا اعلان کیا مودی سیدھے آر ایس ایس ہیڈکوارٹر گئے۔

TOPPOPULARRECENT