Monday , November 20 2017
Home / شہر کی خبریں / اکبراویسی کیخلاف قانونی کارروائی کی اجازت

اکبراویسی کیخلاف قانونی کارروائی کی اجازت

نفرت انگیز تقریر مقدمات میں حکومت تلنگانہ کے احکام
حیدرآباد۔ 21 اپریل (پی ٹی آئی) حکومت تلنگانہ نے مجلسی لیڈر اکبرالدین اویسی کے خلاف مبینہ نفرت انگیز تقریر سے متعلق مقدمہ میں قانونی کارروائی کی آج اجازت دے دی۔ ایک سرکاری حکم نامہ میں کہا گیا کہ حکومت تلنگانہ، ملزم (اکبرالدین) کو تعزیرات ہند کی دفعہ 153-A کرائم نمبر 01/2013 نرمل پولیس اسٹیشن ضلع عادل آباد کے سلسلے میں قانونی چارہ جوئی کی اجازت دیتی ہے۔ تعزیرات ہند کی دفعہ 153-A، دو مختلف گروپس کے مابین مذہب، نسل، مقام پیدائش، رہائش، زبان وغیرہ کی بنیاد پر نفرت کو بڑھاوا دینے اور ہم آہنگی متاثر کرنے والی کارروائیوں سے متعلق ہے۔ اکبرالدین اویسی حلقہ اسمبلی چندرائن گٹہ کی نمائندگی کرتے ہیں اور وہ تلنگانہ قانون ساز اسمبلی میں مجلس کے فلور لیڈر بھی ہیں، ان پر ملک کے خلاف جنگ چھیڑنے اور غداری کے علاوہ دیگر کئی الزامات بھی عائد کئے گئے ہیں۔ انہوں نے عادل آباد اور نظام آباد میں مبینہ طور پر نفرت انگیز تقریر کی تھی جس کے بعد مقدمات درج کئے گئے۔ پولیس نے ان دو اضلاع میں ڈسمبر 2012ء میں عوامی جلسوں کے دوران اشتعال انگیز تقاریر اور اہانت آمیز زبان استعمال کرنے کی بناء دو مقدمات درج کئے ہیں۔ اکبرالدین اویسی کو اس وقت گرفتار کیا گیا تھا تاہم انہیں دونوں مقدمات میں ضمانت منظور کرلی گئی۔

TOPPOPULARRECENT