Thursday , September 20 2018
Home / Top Stories / اکرام الدین کلیم حملہ کیس : پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرلئے

اکرام الدین کلیم حملہ کیس : پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرلئے

حیدرآباد۔ 11 جنوری (سیاست نیوز) مسلمانوں کے خلاف غیروں کی سازشیں کیا کب تھیں کہ اب مسلمان آپس ہی میں ایک دوسرے کے خون کے پیاسے ہوتے جارہے ہیں۔ معمولی مسائل پر جان لیوا حملوں میں اضافہ ہورہا ہے۔ شہر حیدرآباد میں حالیہ دنوں میں ایسے کئی واقعات رونما ہوچکے ہیں۔ دو دن قبل ہی پیپلز پلازہ نیکلس روڈ پر ایک مسلم نوجوان کا گلا کاٹ کر بے رحمی سے قتل کردیا گیا اور کل رات ہی مانصاحب ٹینک پر ایک مسلم نے دوسرے مسلمان پر قاتلانہ حملہ کرکے لہولہان کردیا۔ مسلم معاشرے کیلئے ایسے واقعات تشویشناک ہیں۔ واضح رہے کہ مانصاحب ٹینک میں کل رات پیش آئے اکرام الدین کلیم عرف کیپٹن کلیم پر قاتلانہ حملے واقعہ میں پولیس ہمایوں نگر ایک مقدمہ درج کرتے ہوئے حملہ آوروں کی تلاش شروع کردی ہے۔ مقام واردات ’’الیگینس اپارٹمنٹ‘‘ مانصاحب ٹینک سے پولیس کو سی سی ٹی وی فوٹیجس دستیاب ہوئے ہیں جس سے یہ صاف ظاہر ہوتا ہے کہ کلیم کا قتل کرنے کیلئے ان پر بہیمانہ انداز میں حملہ کیا گیا۔ پولیس نے کل رات مقام واردات سے تیز دھاری ہتھیار بھی برآمد کرلیا ہے۔ ابتدائی تحقیقات میں یہ معلوم ہوا ہے کہ اکرام الدین کلیم اور سعود عمودی کا اراضی تنازعہ چل رہا تھا اور اس سلسلے میں کلیم پر 25 ڈسمبر 2016 میں اسی قسم کا ایک حملہ کیا گیا تھا جس میں وہ بچ گئے تھے۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ اراضی تنازعہ سے متعلق ایک مقدمہ بھی عدالت میں زیردوراں ہے اور اس کی سماعت بھی عنقریب مکمل ہونے والی ہے جس کے پیش نظر یہ حملہ کیا گیا ہوگا۔ پولیس ہمایوں نگر نے اقدام قتل اور آرمس ایکٹ کے تحت ایک مقدمہ درج کرتے ہوئے سی سی ٹی وی فوٹیجس کے ذریعہ حاصل کی گئی ویڈیو کی مدد سے خاطیوں کی تصاویر تیار کی گئی ہے اور پولیس کی خصوصی ٹیموں کے علاوہ کمشنر ٹاسک فورس کو بھی یہ فوٹوز حوالے کئے گئے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ حملے کیلئے کرایہ کے قاتلوں سے مدد لی گئی۔شبہ کی بنیاد پر پولیس نے دو افراد کو حراست میں لیا ہے۔ ہمایوں نگر پولیس اسٹیشن میں درج کئے گئے مقدمہ میں کیپٹن کلیم کے افرادِ خاندان نے اس قاتلانہ حملے کے پس پردہ سعود عمودی اور اس کے ساتھیوں پر شبہ ظاہر کیا ہے جبکہ پولیس ذرائع نے بتایا کہ سعود عمودی اور اس کے ساتھی مسعود، ابو اور دیگر پولیس کی گرفت سے باہر ہے۔ اکرام الدین کلیم جن پر رات دیر گئے قاتلانہ حملہ کیا گیا، آج ایک کارپوریٹ دواخانہ میں اُن کی سرجری کی گئی اور ان کے چہرے اور پیٹھ پر ٹانکے دیئے گئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT