Sunday , November 19 2017
Home / کھیل کی خبریں / اکرم کا انگلینڈ کیخلاف پاکستانی بیٹنگ پر عدم اعتماد

اکرم کا انگلینڈ کیخلاف پاکستانی بیٹنگ پر عدم اعتماد

ملبرن ، 11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کے سابق کپتان وسیم اکرم کا کہنا ہے کہ انھیں دورۂ انگلینڈ میں پاکستان کی بولنگ کے حوالے سے کوئی پریشانی نہیں لیکن بیٹنگ کا شعبہ باعث تشویش ہے۔ کرکٹ آسٹریلیا کو انٹرویو میں اکرم نے کہا کہ پاکستانی بیٹنگ انگلینڈ کے بولرز کی متوقع سوئنگ بولنگ کے خلاف مشکلات کا شکار ہوگی۔ پاکستانی ٹیم نے دورۂ انگلینڈ کے باقاعدہ آغاز سے قبل ٹور میچوں میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا ، جہاں اظہرعلی، یونس خان اور اسد شفیق نے بہترین بلے بازی جبکہ محمد عامر، یاسر شاہ اور دیگر بولرز نے بھی اچھی کارکردگی دکھائی۔ اکرم کا ماننا ہے کہ’’کوئی بلے باز جو بیک فٹ تکنیک میں کمزور ہو یا جو نہ آگے اور نہ پیچھے جا سکے وہ ان حالات میں ایسے بولرز کے خلاف پریشانی میں ہوں گے‘‘۔ سابق کپتان نے پاکستانی بولرز پر زور دیا کہ وہ اپنی لائن اور لینتھ پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے انگلش بلے بازوں بالخصوص ٹسٹ کرکٹ میں واپسی کرنے والے گیری بیالنس کو دباؤ میں رکھیں۔ انگلینڈ نے پاکستان کے خلاف پہلے ٹسٹ کیلئے بیالنس کو ایک سال کے وقفے کے بعد دوبارہ انگلش ٹسٹ اسکواڈ میں شامل کیا ہے، جنھوں نے اپنا آخری میچ آسٹریلیا کے خلاف کھیلا تھا۔ سابق عظیم بولر اکرم نے کہا : ’’مجھے توقع ہے کہ پاکستانی بولر اپنی گیندیں اُن (گیری بیالنس) سے دور کریں گے اور انھیں اکسٹرا کوور کی جانب ڈرائیو کیلئے مجبورکریں گے۔‘‘ پاکستانی ٹیم میں محمد عامر، وہاب ریاض اور یاسر شاہ نمایاں بولرز ہوں گے۔ اکرم کا کہنا ہے کہ ’’مجھے پوری امید ہے کہ پاکستان نے اپنی تیاری مکمل کی ہوگی کیونکہ انگلینڈ میں نئی گیند کا سامنا کرنا مشکل ہوتا ہے‘‘۔ پاکستانی ونڈے ٹیم کے کپتان اظہرعلی نے سومرسٹ اور سسکس کے خلاف ٹور میچوں میں متواتر سنچریاں اسکور کی ہیں جبکہ یونس خان نے سومرسٹ کے خلاف سنچری اور سسکس کے خلاف نصف سنچری بنائی تھی۔ اسی طرح اسد شفیق اور کپتان مصباح الحق نے بھی نصف سنچریاں بنا کر اپنی بہترین فارم کا مظاہرہ کیا ۔

TOPPOPULARRECENT