Friday , December 15 2017
Home / Top Stories / اکھلیش ، راہول کا 10 نکاتی مشترک اقل ترین پروگرام

اکھلیش ، راہول کا 10 نکاتی مشترک اقل ترین پروگرام

غریب خاندانوں کو پنشن، نوجوانوں کو روزگار کی ضمانت، خواتین کو نوکریوں میں ریزرویشن

لکھنؤ 11 فروری (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش میں 403 اسمبلی نشستوں کے منجملہ 300 سے زائد جیتنے کی کوشش میں صدر سماج وادی پارٹی اکھلیش یادو اور نائب صدر کانگریس راہول گاندھی نے آج مشترکہ طور پر 10 نکات جاری کئے جن کی اساس پر اُن کا اتحاد برسر اقتدار آنے پر کام کرے گا۔ دونوں قائدین نے پریس کانفرنس میں یہ نکات جاری کئے جن میں وہ وعدے شامل ہیں جو دونوں پارٹیوں نے اپنے منشوروں میں ریاست کے عوام سے کئے ہیں۔ ان نکات کی فہرست میں نوجوانوں کو اسمارٹ فونس کی مفت تقسیم، 20 لاکھ نوجوانوں کو ہنر کی تربیت کے ذریعہ روزگار کی ضمانت، کسانوں کو قرض کی معافی، سستی برقی اور فصلوں کے لئے مناسب معاوضہ شامل ہے۔ اِس فہرست میں یہ عہد بھی کیا گیا ہے کہ ایک کروڑ غریب خاندانوں کو ایک ہزار روپئے ماہانہ پنشن فراہم کیا جائے گا۔ شہری غریبوں کو 10 روپئے میں ایک وقت کا کھانا سربراہ کیا جائے گا۔ سرکاری نوکریوں میں خواتین کے لئے 33 فیصد تحفظ اور پنچایت و مجالس مقامی انتخابات میں 50 فیصد ریزرویشن کے علاوہ 5 سال میں ہر گاؤں کے لئے سڑک اور پانی یقینی بنانا شامل ہے۔ نویں تا بارہویں جماعت کی تمام طالبات اور اچھا تعلیمی مظاہرہ کرنے والے اسٹوڈنٹس کے لئے فری سائیکلیں، 10 لاکھ غریب دلتوں اور پسماندہ فیملیوں کے لئے مفت مکانات، تمام اضلاع کو جوڑنے والی 4 لائن والی سڑکیں اور 6 بڑے شہروں میں میٹرو کی فراہمی بھی اِس فہرست میں شامل ہے۔ اقلیتوں اور پسماندہ طبقات کے لئے اِس میں وعدہ کیا گیا ہے کہ اُن کی آبادی کے تناسب سے تمام بہبودی اسکیمات میں اُنھیں نمائندگی دی جائے گی اور ساتھ ہی محکمہ پولیس کو عصری بناتے ہوئے اُسے زیادہ مؤثر بنایا جائے گا نیز ڈائیل 100 اسکیم کو مرحلہ وار انداز میں وسعت دی جائے گی۔ اِن وعدوں میں اُن کا بھی احاطہ کیا گیا ہے جو راہول گاندھی نے اپنی ریاست گیر کسان یاترا کے دوران کئے تھے جیسے کسانوں کے قرض کی معافی اور اُن کے لئے برقی شرح میں کٹوتی، جو کانگریس کا دیرینہ مطالبہ رہا ہے۔ اکھلیش نے کہاکہ کم از کم سماج وادی لوگ اُسے عملی شکل ضرور دیتے ہیں جو کچھ وہ بولتے ہیں لیکن بعض دیگر صرف ’’من کی بات‘‘ کرتے ہیں۔ لیکن ’’کام کی بات نہیں کرتے‘‘۔ وہ ریالیوں میں اور اضلاع میں جاکر یہ نہیں بتاتے کہ اُن کی حکومت کے کارہائے نمایاں کیا ہیں۔ چیف منسٹر یوپی نے اِس ضمن میں وزیراعظم نریندر مودی کے تبصرہ پر جوابی طنز میں کہاکہ اُن کا کہنا ہے کہ دو خاندانوں میں اتحاد ہوگیا ہے۔
میں کہوں گا کہ دو نوجوان یکجا ہوئے ہیں اور یہ ایس پی اور کانگریس کا اتحاد ہے۔ اکھلیش نے مزید کہاکہ یہ 10 اقدامات ترقی کے لئے طے کئے گئے ہیں اور دونوں پارٹیوں نے اتفاق کیا ہے۔ چنانچہ کانگریس اور ایس پی برسر اقتدار آنے پر مستقبل میں اِن نکات کو روبہ عمل لائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT