Thursday , September 20 2018
Home / Top Stories / اگر ایران نیوکلیئر بم بنائے تو ہم بھی بنا ئینگے : ولیعہد سعودی عرب

اگر ایران نیوکلیئر بم بنائے تو ہم بھی بنا ئینگے : ولیعہد سعودی عرب

واشنگٹن۔ 15 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب نے کہا ہے کہ ایران اگر نیوکلیئر بم تیار کرتا ہے تو وہ بھی ایسا کرگزرے گا۔ مملکت کے 32 سالہ ولیعہد محمد بن سلمان نے ایک ٹی وی انٹرویو کے دوران جو آج نشر کیا گیا ،کہا کہ سعودی عرب نیوکلیئر بم بنانا نہیں چاہتا لیکن اگر ایران نیوکلیئر بم تیار کرے تو بلا شک و شبہ ہم بھی جلد از جلد اسی طرح کا اقدام کریں گے۔ شہزادہ محمد نے اتوار کو ’سی بی ایس‘ ٹی وی کو دیئے گئے انٹرویو میں کہا کہ مملکت پورے مشرق وسطیٰ اور اس سے کہیں آگے اپنا اثر و رسوخ قائم کرنے کیلئے ایران کے ساتھ برسر پیرکار ہے۔ وہ برقی توانائی کی صلاحیت حاصل کرنے کے منصوبے بنارہا ہے۔ سعودی مملکت کا تیل پر انحصار کم کرنے کا ایک اصلاحی منصوبہ ولیعہد کی زیر قیادت بنایا گیا ہے۔ امریکہ، جنوبی کوریا، روس، فرانس اور چین کئی ارب ڈالر والے ٹنڈر پر سعودی عرب میں اولین دو نیوکلیئر ری ایکٹرز قائم کرنے کیلئے بولیاں دے رہے ہیں۔ سعودی عرب دنیا کا اعلی سطح کا تیل برآمد کنندہ ملک ہے اور ماضی میں نیوکلیئر ٹکنالوجی کے پرامن استعمال پر زور دے چکا ہے لیکن اس نے یہ واضح نہیں کیا کہ کیا وہ نیوکلیئر ایندھن تیار کرنے کیلئے یورینیم کی افزودگی عمل میں لائے گا۔ ایٹمی ہتھیاروں کی تیاری کیلئے یہ طریقہ کار ضروری ہے۔ حکومت نے ایٹمی توانائی پروگرام کیلئے قومی پالیسی منگل کو منظور کی ہے۔ اس میں پرامن مقاصد کیلئے تمام نیوکلیئر سرگرمیاں شامل ہیں، جو بین الاقوامی معاہدوں کے مطابق ہوں۔ ری ایکٹرز کو افزودہ یورینیم درکار ہوتی ہے جسے تقریباً 5 فیصد خالص بنایا جائے لیکن یہی ٹکنالوجی اس طریقہ کار میں افزودہ بھاری دھات کو ہتھیاروں کی سطح تک پہنچا سکتی ہے۔ ایران کے تعلق سے مغربی ممالک کے ساتھ ساتھ کٹر حریف سعودی عرب کے بشمول خطہ کے دیگر ممالک کو بھی اندیشہ ہے کہ وہ اندرون ملک یورینیم کو افزودہ کررہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT