Wednesday , December 19 2018

ایئر انڈیامیں سرمایہ کشی پرحتمی فیصلہ نہیں: اشوک گجپتی راجو

نئی دہلی ۔ 21 فبروری ۔( سیاست ڈاٹ کام ) شہری ہوابازی کے وزیر اشوک گجپتی راجو نے آج کہا کہ فضائی خدمات فراہم کرنے والی سرکاری کمپنی ایئر انڈیا کی اسٹریٹیجک سرمایہ کشی کے تحت کتنے فیصد حصص فروخت کئے جائیں گے اس پر ابھی کوئی حتمی فیصلہ نہیں ہوا ہے ۔ راجو نے آج یہاں آل انڈیا ویمن پریس کلب میں منعقد ’پریس سے ملئے ‘پروگرام میں بتایا کہ اس سلسلے میں وزرا کے گروپ کو آخری فیصلہ کرنا ہے اور ابھی یہ طے نہیں کیا گیا ہے کہ کتنے فیصد حصص فروخت کئے جائیں گے ۔قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے02 فبروری کو شہری ہوا بازی کے وزیر مملکت جینت سنہا نے کہا تھا کہ حکومت کا پلان کم از کم 51فیصد حصہ فروخت کرنے کا ہے ۔ اس بارے میں پوچھے جانے پر راجو نے کہا کہ یہ سنہا کی اپنی رائے ہے اور حکومت ہر طرح کی رائے اور تجاویز کا خیر مقدم کرتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سرمایہ کشی کا عمل اس سال کے آخر تک مکمل ہونے کی امید ہے ۔ ایئرانڈیا 50 ہزار کروڑ روپیے سے زیادہ مقروض ہے ۔ راجو نے کہا کہ ایئر لائن’قرض کے جال‘ میں پھنس چکی ہے اور اس کو پٹری پر لانے کے لئے اس کی انتظامیہ میں تبدیلی ضروری ہے ۔

TOPPOPULARRECENT