Friday , June 22 2018
Home / کھیل کی خبریں / ایتھنس کے اولمپکس اسٹیڈیم زبوں حالی کا شکار

ایتھنس کے اولمپکس اسٹیڈیم زبوں حالی کا شکار

ایتھنس ۔ 8 اگست(سیاست ڈاٹ کام) اولمپکس کو دنیا میں کھیلوں کا سب سے بڑا میلہ ماناجاتا ہے، ریو ڈی جینرو 2016 میں میگا ایونٹ کی میزبانی کریگا ، اس کے شایان شان انعقاد کیلئے برازیلی شہر میں نئے شاہ کار زیر تعمیر ہیں، لیکن دوسری جانب 2004 کے میزبان شہر ایتھنس میں اس مقصد کیلیے خصوصی طور پر بنائے گئے اسٹیڈیمس اور دیگر مقامات زبوں حالی کے شکار ہ

ایتھنس ۔ 8 اگست(سیاست ڈاٹ کام) اولمپکس کو دنیا میں کھیلوں کا سب سے بڑا میلہ ماناجاتا ہے، ریو ڈی جینرو 2016 میں میگا ایونٹ کی میزبانی کریگا ، اس کے شایان شان انعقاد کیلئے برازیلی شہر میں نئے شاہ کار زیر تعمیر ہیں، لیکن دوسری جانب 2004 کے میزبان شہر ایتھنس میں اس مقصد کیلیے خصوصی طور پر بنائے گئے اسٹیڈیمس اور دیگر مقامات زبوں حالی کے شکار ہیں۔ تفصیلات کے مطابق کھیلوں سے جہاں دوستی ، محبت اور امن کا پیغام دنیا بھر کو دیا جاتا ہے وہی کھیلوں کے مقابلے کسی بھی ملک میں صحت مند ، جسمانی اور دماغی طور پر مضبوط معاشرے کی تشکیل میں بھی اہم کرادار ادا کر تے ہیں، مگر بد قسمتی سے اب دنیا کے بعض ملکوں میں کھیلوں کے جمنازیم اور اسٹیڈیم کی دیکھ بھال سے چشم پوشی اب فیشن بن گیا ہے، پاکستان میں دہشت گردی ، بم دھماکوں کے خوف سے کھیلوں کے مقامات ویران ہوگئے ہیں، غیر ملکی ٹیمیں پاکستان آ نے سے خوفزدہ ہیں، ان حالات میں یہاں کھیلوں کے منتظمین نے اسٹیڈیم اور جمنازیم کی تز ئین و آ رائش پر توجہ دینا بھی چھوڑ دی ہے مگرحیرت انگیز طور پر جدید اولمپک کھیوں کے بانی ملک یونان میں بھی کھیلوں کے حکام کی غفلت اور

لاپرواہی سے وہاں کے اسٹیڈیم اور جمنازیم اب خستہ حالی کا شکار دکھائی دے رہے ہیں۔یونان نے 2004 میں اولمپک گیمس کی میز بانی کے لئے ایک خطیر رقم خرچ کر کے اپنے اسٹیڈیم اور جمنازیم کی صور حال کو بہتر بنایا تھا لیکن اب 10 سال کے بعد اس کے جدید سہو لتوں سے آ راستہ اسٹیڈیم اب زبوں حالی اور تباہی سے دوچار ہیں، کھیلوں کے مقابلے نہ ہونے کی وجہ سے ان کے یہ اسٹیڈیم اور جمنازیم شادی بیاہ کی تقریبات کے لئے استعمال ہورہے ہیں۔ یہاں کھیلوں کے مقابلوں کی بجائے پریس کانفرنس اور گانے بجانے کی تقریبات کا انعقاد کیا جارہا ہے، اس اسٹیڈیم میں جہاں 2004 کے اولمپک گیمس کی افتتاحی اور اختتامی تقریبات کا انعقاد کیا گیا تھا اس میں کئی سال پرانی لگی ہوئی گھڑی بھی بند پڑی ہے جس سے یونان میں کھیلوں کے وقت کے رک جانے کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے، اسٹیڈیم اور جمنازیم میں کرسیاں ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں، تاہم کھیلوں سے دلچسپی رکھنے والوں کے لئے یہ خبر خوش آئند ہے کہ برازیل میں جس نے چند ماہ قبل فٹبال کے عالمی کپ کی میزبانی کی اور 2016 میں ری ڈی جنیرو میں ہونے والے اولمپک گیمس کے لئے نت نئے اور جدید سہولتوں سے آراستہ اسٹیڈیمس کی تعمیرات کا کام تیزی سے جاری ہے جبکہ بعض مقامات کی تزئین و آرائش بھی کی جارہی ہے تاکہ دنیائے کھیل کے اس سب سے بڑے ایونٹ کی میزبانی کو یادگار بنایا جاسکے۔

TOPPOPULARRECENT