Wednesday , May 23 2018
Home / دنیا / ایران اور اسرائیل کے ایک دوسرے کی فوجی تنصیبات پر حملے

ایران اور اسرائیل کے ایک دوسرے کی فوجی تنصیبات پر حملے

یروشلم ۔ 10 مئی (سیاست ڈاٹ کام) اسرائیل کے وزیردفاع رویگڈور لیبرمین نے کہا کہ اسرائیل نے شام میں موجود تقریباً تمام ایرانی انفراسٹرکچر پر حملہ کیا جسے ایران کی جانب سے کئے گئے راکٹ حملے کا جوابی وار قرار دیا گیا ہے۔ ایک سیکوریٹی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے لیبرمین نے کہا کہ ایران کے تقریباً ہر انفراسٹرکچر کو نشانہ بنایا گیا ہے جو شام میں واقع ہیں۔ اسرائیلی فوج نے بھی اس بات کی توثیق کی کہ شام میں واقع ایران کے درجنوں فوجی تنصیبات کو نشانہ بنایا گیا ہے۔ وزیردفاع نے اس موقع پر ایک ضرب المثل کا استعمال کرتے ہوئے کہا کہ اگر ہم پر بارش ہوئی تو پھر طوفان کی زد میں آنے سے آپ بھی نہیں بچ سکیں گے۔ یاد رہیکہ ایران کیخلاف اب تک کا یہ اسرائیل کا سب سے بڑا حملہ تھا۔ قبل ازیں ایرانی فوج نے اسرائیل کی فوجی تنصیبات پر 20 راکٹس اور میزائلس برسائے تھے جو گولان پہاڑیوں پر واقع ہیں۔ ان میں سے بعض میزائلس کو اسرائیل کے اینٹی میزائل سسٹم نے ناکارہ کردیا جس سے کوئی ہلاکت نہیں ہوئی۔ فوج کے ترجمان لیفٹننٹ کرنل جوناتھن کانریکس نے اخباری نمائندوں کو یہ بات بتائی۔

TOPPOPULARRECENT