Monday , December 18 2017
Home / عرب دنیا / ایران سے کسی ثالثی کی ضرورت نہیں: سعودی عرب

ایران سے کسی ثالثی کی ضرورت نہیں: سعودی عرب

ریاض ۔ 16 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) سعودی عرب کے وزیرخارجہ عادل الجبیر نے کہا ہیکہ ایران کیساتھ تعلقات کی بحالی کیلئے کسی ملک کی ثالثی کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ تہران کو اچھی طرح معلوم ہیکہ دوسرے ملکوں کے ساتھ برادرانہ تعلقات کی بحالی کیا تقاضے ہیں اور اس باب میں اسے کیا کچھ کرنا ہے۔ اپنے ایک بیان میں سعودی وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ ایران نے ریاض کے حوالے سے معاندانہ روش اپنا رکھی تھی جسے ہر صورت میں تبدیل ہونا چایئے۔ اگرایران اپنی غیرذمہ دارانہ پالیسی تبدیل نہیں کرتا تو دو طرفہ تعلقات درست نہیں ہو سکتے ہیں۔ عادل الجبیر نے کہا کہ موجودہ حالات میں ایران کیساتھ ثالثی کی کوئی گنجائش نہیں۔ جب تک ایران پڑوسی ملکوں سے تعلقات بہتر بنانے کیلئے اپنی ذمہ داریاں ادا نہیں کرتا تب تک کسی تیسرے فریق کی طرف سے مفاہمتی مساعی کا کوئی فائدہ نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ تعلقات کی بحالی سے قبل ایران کو ہمارے اندرونی معاملات میں مداخلت اور عرب ممالک میں دخل اندازی کا سلسلہ بند کرتے ہوئے دہشت گردی اور فرقہ واریت میں ملوث تنظیموں کی مدد سے ہاتھ کھینچنا ہو گا۔ خیال رہیکہ ایران اور سعودی عرب کے درمیان پچھلے چند برسوں سے کشیدگی چلی آرہی ہے۔ دونوں ملکوں میں حال ہی میں اس وقت سرد جنگ شدت اختیار کر گئی تھی جب تہران میں شدت پسندوں نے سعودی سفارتخانے اور مشہد میں قونصل خانے پر حملہ کر کے انہیں نذرآتش کر دیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT