Wednesday , September 26 2018
Home / دنیا / ایران میں پرتشدد مظاہرے ، 5 سکیورٹی اہلکاروں کی موت

ایران میں پرتشدد مظاہرے ، 5 سکیورٹی اہلکاروں کی موت

لندن، 21 فروری (سیاست ڈاٹ کام) ایران کے دارالحکومت تہران میں مظاہرے کے دوران تشدد میں سکیورٹی فورس کے پانچ جوانوں کی موت ہو گئی ہے ۔ اس سلسلے میں پولس نے تین سو افراد کو گرفتار کیا ہے۔ پولس نے بتایا کہ حکومت کی طرف سے صوفی بزرگوں پر مبینہ تشدد کے خلاف گونابادي صوفی مظاہرین کل رات سڑکوں پر اترے اور ااپنے اراکین کی رہائی کے مطالبے تھانے کے پاس جمع ہو گئے ۔ اس دوران مظاہرین اور پولیس اہلکاروں کے درمیان جھڑپ ہو گئی۔ امریکہ کے نیویارک واقع ایرانی انسانی حقوق مرکز کے مطابق ایران میں گزشتہ دو ماہ میں بہت سے صوفی درویشوں کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ ان میں سے دس افراد 14 جنوری کو صوفی پیروکاروں کی رہائی کا مطالبہ کررہے تھے ۔ لوگوں پر پولیس کارروائی میں متعدد افراد زخمی ہو گئے تھے۔ پولیس نے بتایا کہ مظاہرین نے ایک بس سے تین پولیس اہلکاروں کو روند دیا جس کی وجہ سے ان کی موت ہو گئی اور ان لوگوں نے ایک سیکورٹی جوان کو گاڑی سے کچل کر اور ایک دوسرے کی چاقو مار کر قتل کر دیا۔ پولیس کے ترجمان منتظر مہدی نے بتایا کہ تشدد کے سلسلے میں دو ڈرائیوروں سمیت تین سو سے زیادہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ اس دوران تقریبا 30 پولیس افسر اور کچھ مظاہرین زخمی ہوئے ہیں۔ ادھر، گونابادی صوفی مظاہرین نے ویب سائٹ پر بتایا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے کچھ مظاہرین کو گولی مار دی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT