Monday , June 18 2018
Home / دنیا / ایران پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا : نتن یاہو

ایران پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا : نتن یاہو

یروشلم۔12اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم اسرائیل بنجامن نتن یاہو نے ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان نیوکلیئر معاہدہ کے چوکھٹے پر اتفاق رائے کے خلاف اپنی تنقید جاری رکھتے ہوئے انتباہ دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا ۔ یہ ابھرتا ہوا سودا جس کے تحت ایران اپنی نیوکلیئر سرگرمیوں میں تخفیف کردے گا اور اس کے عوض اُس

یروشلم۔12اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) وزیراعظم اسرائیل بنجامن نتن یاہو نے ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان نیوکلیئر معاہدہ کے چوکھٹے پر اتفاق رائے کے خلاف اپنی تنقید جاری رکھتے ہوئے انتباہ دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا ۔ یہ ابھرتا ہوا سودا جس کے تحت ایران اپنی نیوکلیئر سرگرمیوں میں تخفیف کردے گا اور اس کے عوض اُسے تعزیری معاشی تحدیدات سے راحت حاصل ہوجائے گی ۔ اس حملہ کے سلسلہ کا تازہ ترین واقعہ ہے ۔ طویل بات چیت کے بعد سوئیٹزرلینڈ کے شہر لوسان میں مذاکرات کا 2اپریل کو ایران کے متنازعہ نیوکلیئر پروگرام پر معاہدہ کے بارے میں ایک چوکھٹے سے اتفاق رائے کرچکے ہیں ۔ اس کے نتیجہ میں اسرائیل نے بار بار اسے ’’تاریخی غلطی‘‘ قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے ۔ نتن یاہو نے کہا کہ انہیں افسوس ہے کہ انہوں نے جن باتوں کا انتباہ دیا تھا ‘ وہ تمام چوکھٹے معاہدہ میں یکجا کردی گئی ہے اور لوسان میں یہ معاہدہ ہماری آنکھوں کے سامنے حقیقت بن گیا ہے ۔ یہ چوکھٹا صف اول کی دہشت گرد مملکت کو نیوکلیئر بم بنانے کی گنجائش فراہم کرتا ہے ‘

ایسے ملک پر کیسے بھروسہ کیا جاسکتا ہے ۔ امکانی معاہدہ جس کو 30جون تک قطعیت دی جائے گی ۔ ایران کو نمایاں طور پر نیوکلیئرصلاحیتیں فراہم کرے گا ۔ نتن یاہو نے کہا کہ یہ معاہدہ ان صلاحیتوں کو ختم نہیں کررہا ہے بلکہ ان کا تحفظ کررہا ہے ۔ ہم دیکھ چکے ہیں کہ معائنے سنجیدہ نہیں تھے ‘ فی الحال کوئی نگرانی جاری نہیں ہے ۔ ہم دیکھ رہے ہیں کہ تحدیدات برخواست کی جارہی ہے ۔ ایران کی طرف سے مطالبہ کے مطابق فوری طور پر تحدیدات ختم کی جارہی ہے اور ایران تحدیدات کے بغیر اپنی پالیسی میں تبدیلی کردے گا جو ہر جگہ جارحانہ حملہ کرنے کی ہے ۔ اسرائیل اور کئی مغربی ممالک کی حکومتوں کو شبہ ہے کہ ایران کا سیویلین نیوکلیئر پروگرام اس کی فوجی صلاحیت میں اضافہ کی کوششوں کا ایک بہانہ ہے ۔ ایران اس الزام کی تردید کرتا رہا ہے ۔ اسرائیل مشرقی وسطی ٰ کا واحد ملک ہے ۔

TOPPOPULARRECENT