Tuesday , December 12 2017
Home / کھیل کی خبریں / ایران کا آج میکسیکو اور عراق کا مالی سے مقابلہ

ایران کا آج میکسیکو اور عراق کا مالی سے مقابلہ

l کپتان کی عدم موجودگی کے باوجود ایرانی کوچ پرعزم
l عراق کو اپنے کپتان محمد داؤد کا نقصان، حریف ٹیم سے سخت مقابلہ متوقع

مرگاؤ ۔ 16 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) فٹبال میں ایشیاء کا پاور ہاؤس کہلانے والے ملک ایران کی فٹبال ٹیم کل یہاں فیفا انڈر17 ورلڈ کپ کے پری کوارٹر فائنل مقابلہ میں میکسیکو کے خلاف بھی فتوحات کے سلسلہ کو جاری رکھنے کی خواہاں ہے جیسا کہ اس نے گروپ مرحلہ میں ناقابل شکست رہتے ہوئے اب ناک آؤٹ مرحلہ کا آغاز کیا ہے۔ ایران نے ٹورنمنٹ کے آغاز پر پہلے مقابلہ میں گینی کو 3-1، جرمنی کو 4-0 اور کوسٹاریکا کو 3-0 سے شکست دیتے ہوئے گروپ سی میں پہلا مقام حاصل کیا ہے۔ ایرانی ٹیم اپنے فتوحات کے سلسلہ کو پری کوارٹر فائنل میں بھی جاری رکھتے ہوئے ورلڈ کپ میں شرکت کررہے چوتھی مرتبہ کوارٹر فائنل میں رسائی حاصل کرنے کا پہلے اعزاز کیلئے کوشاں ہے کیونکہ ورلڈ کپ چار مرتبہ کھیلنے کے باوجود وہ کبھی کوارٹر فائنل میں رسائی حاصل نہیں کرپائی ہے اور اس مرتبہ اس کیلئے بہترین موقع ہے۔ دوسری جانب ایران کیلئے یہ ایک جھٹکا ہیکہ اس کے کپتان محمد گھوبے شوی ٹیم کو دستیاب نہیں ہوں گے کیونکہ کوسٹاریکا کے خلاف انہیں دوسری مرتبہ ٹورنمنٹ میں زرد کارڈ دکھایا گیا تھا۔ ایرانی کوچ عباس نے کہا کہ فٹبال کا یہ ایک حصہ ہے اور ہم کل کے مقابلہ کیلئے اس چیلنج سے بھی نمٹنے کیلئے تیار ہیں۔ ایران کیلئے یونس دیلگی اور اللہیار سید بہترین مظاہرہ کررہے ہیں اور کل کھیلے جانے والے پری کوارٹر فائنل مقابلہ میں ان ہی کھلاڑیوں سے ٹیم کو امیدیں ہیں۔ علاوہ ازیں گذشتہ ورلڈ کپ میں دوسرا مقام حاصل کرنے والی مالی کی ٹیم اپنے پری کوارٹر فائنل مقابلہ میں عراق کے خلاف کامیابی کیلئے پسندیدہ موقف میں ہے۔ دو مرتبہ کی چمپیئن مالی نے گروپ بی میں پیراگوئے کے خلاف قریبی شکست 2-3 کے بعد شاندار واپسی کرتے ہوئے ترکی کو 3-0 اور نیوزی لینڈ کو 3-1 سے شکست دیتے ہوئے گروپ میں 6 نشانات حاصل کئے۔ مالی اور عراق کے درمیان یہ ایک دلچسپ مقابلہ ہوسکتا ہے کیونکہ عراق کے پاس ڈیفنس کافی شاندار ہے جبکہ مالی اپنے اسٹرائک کھلاڑیوں کی وجہ سے فتوحات حاصل کررہا ہے۔ عراق کیلئے بھی یہ بری خبر ہیکہ اس کے کپتان محمد داؤد کل کا مقابلہ نہیں کھیل پائیں گے جس سے مالی کو یقینا فائدہ ہوگا۔ ٹیم کے جارحانہ کھلاڑی سلیم جیدھو اور ہدجی ڈریم عراق کیلئے اہم کھلاڑی ثابت ہوسکتے ہیں جوکہ مالی کیلئے خطرہ پیدا کرسکتے ہیں۔ مالی کیلئے سب سے تشویش پہلو اس کا ڈیفنس ہے جس کی خامیاں پیراگوئے کے خلاف کھل کر سامنے آئی تھی۔ ایشین چمپیئن عراق کیلئے اپنے گروپ کا آخری مقابلہ انگلینڈ کے خلاف مایوس کن رہا جہاں اسے 0-4 کی شکست کے علاوہ اپنے کپتان محمد داؤد کو بھی گنوانا پڑا جو کہ 62 ویں منٹ میں ٹورنمنٹ کا دوسرا زرد کارڈ حاصل کرنے پر مجبور ہوئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT